وہوا، بجلی کنکشن منقطع، واٹر سپلائی سکیمیں بند،شہریوں کا مظاہرہ

وہوا، بجلی کنکشن منقطع، واٹر سپلائی سکیمیں بند،شہریوں کا مظاہرہ

  

وہوا(نمائندہ پاکستان)وہوا آب نوشی سکیموں کے بجلی کے کنکشن بحال نہ کیے جانے کے باعث شہریوں کا محکمہ واپڈا کے خلاف تین دنوں میں دوسرا مظاہرہ، مظاہرہ میں شہر کی سیاسی جماعتوں کے رہنماں کا خطاب، کنکشنوں کی فوری بحالی کا مطالبہ بصورت دیگر انڈس ہائی وے بلاک کرنے کی دھمکی، تفصیل کے مطابق اندرون شہر اور دنڑ واٹر سپلائی سکیموں کے کنکشن ڈیڑھ (بقیہ نمبر47صفحہ6پر)

کروڑ روپے کے ڈیفالٹر ہونے کے باعث محکمہ واپڈا نے منقطع کردیے تھے جس کے باعث شہر بھر میں ایک ماہ سے پینے کے پانی کی سپلائی معطل ہے جس سے شہری قیامت خیز گرمی میں پینے کے پانی کی بوند بوند کو ترس گئے ہیں کنکشنوں کی بحالی کے لیے دو روز قبل شہریوں کی جانب سے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا تھا اور واٹر سپلائی سکیموں کے کنکشن بحالی کے لیے مظاہرین نے محکمہ واپڈا کو دو روز کا وقت دیا تھا مگر واپڈا حکام نے بجلی کے بلوں کے موجودہ ماہ کے بل جمع نہ کرانے تک کنکشن بحال کرنے سے انکار کردیا جس پر آج ایک مرتبہ پھر شہر کی سیاسی جماعتوں، سول سوسائٹی اور واٹر یوزر کمیٹی کے اراکین کی جانب سے چوک پل دنڑ پر احتجاجی مظاہرہ کیا مظاہرہ سے جماعت اسلامی کے رہنما حفیظ اللہ قیصرانی، جے یو آئی کے مولانا عبد القیوم قیصرانی، پی پی کے عابد محمود بکھائی، شیر زمان بابر، قدرت اللہ کلاچی، واٹر یوزر کمیٹی کے رکن مفتی صفطین ظفر کھتران و دیگر مقررین نے آب نوشی سکیموں کے کنکشن کی عدم بحالی پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اعلان کیا کہ اگر واپڈا حکام نے کنکشن بحال نہ کیے تو شہری راست اقدام اٹھانے پر مجبور ہوں گے اور انڈس وے کو بلاک کریں گے اور یہ احتجاج پانی کی مستقل بنیادوں پر فراہمی تک جاری رہے گا احتجاج کے دوران مظاہرین واپڈا مردہ باد کے نعرے لگاتے رہے۔

مظاہرہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -