انجمن طلبہ اسلام کا ملک گیر تعلیم بچاؤ مہم شروع کرنے کا اعلان

  انجمن طلبہ اسلام کا ملک گیر تعلیم بچاؤ مہم شروع کرنے کا اعلان

  

لاہور(لیڈی رپورٹر) انجمن طلبہ اسلام کے مرکزی سیکریڑی جنرل محمد حسنین مصطفائی نے یکم جو ن تا 30جون تک ملک گیر ''تعلیم بچاو مہم ''اور 4 جون کواسلام آباداور لاہور میں '' پری بجٹ ایجوکیشنل سیمینارز'' کرانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ انجمن طلبہ اسلام تعلیمی بجٹ کے حوالے سے سفارشات بھی تیار کرکے حکمرانوں کو ارسال کرے گی۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے سابق سیکریڑی جنرل محمد اکرم رضوی،ناظم پنجاب (شمالی)محمد راشد مغل کے ہمراہ سٹوڈنٹ سیکریڑیٹ میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔حسنین مصطفائی نے کہا حکومت نے روایتی اور تعلیم دشمن بجٹ پیش کیا تو طلبہ برادری کو سٹرکوں پر لے آئیں گے۔ ملک میں بڑھتے ہوئے تعلیمی مسائل سے نمٹنے واسطے بجٹ میں تعلیم کیلئے مجموعی بجٹ کاکم ازکم 5% تعلیم کے لئے مختص کیا جائے۔

 جبکہ تعلیمی بجٹ کا پچیس فیصد اعلیٰ تعلیم کے لئے مختص کیا جائے۔ تبدیلی کا نعرہ لگانے والوں نے نوجوان نسل کو مایوس کیا ہے۔وفاقی اور صوبائی حکومتیں تعلیم دوست بجٹ پیش کریں۔لاکھوں طلباء  کے مستقبل سے کھیلنے کا گھناؤناکھیل بند کیا جائے گا۔ اعلی تعلیمی بجٹ میں 5.90ارب کی کٹ لگانے والے حکمران تعلیم کے دشمن ہیں۔تعلیم حکمرانوں کی ترجیحات میں سرے سے شامل ہی نہیں ہے۔انہوں نے مزیدکہا مجموعی بجٹ کا 5% تعلیم کے لئے مختص کیا جائے۔مجموعی بجٹ میں اعلی تعلیم کے لیے 150 بلین مختص کئے جائیں، ریسرچ اور ڈویلپمنٹ کے فنڈز میں کٹوتی نہ کی جائے، گزشتہ پانچ برس سے اعلی تعلیم کا بجٹ 65ارب سے نہیں بڑھ رہا جسے فی الفور بڑھایا جائے، کرونا وائرس کی صورت حال تک طلباء  کو جامعات میں 50 فیصد فیس معافی کے ساتھ خصوصی پیکج دیا جائے، جامعات کے اساتذہ کی تنخواہوں میں اضافہ کیا جائے، صوبائی سطح پر تمام صوبہ جات میں سٹوڈنٹس کونسلنگ سینٹرز قائم کئے جائیں، نئی جامعات کی بجائے فی الوقت موجود جامعات میں تعلیمی معیار کو بہتر بنایا جائے، یونیورسٹی سنڈیکیٹ میں طلباء  کی نمائندگی یقینی بنائی جائے، بلوچستان کے پی کے سندھ سمیت جنوبی پنجاب کے پسماندہ علاقوں کی جامعات کو بجٹ میں خصوصی اہمیت دی جائے، جامعات کو پابند کیا جائے کہ وہ کرونا کے مکمل خاتمے تک فیس میں اضافہ نہیں کرینگی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -