پشاور،یونیورسٹی اساتذہ مظاہرے کے دوران 16 افراد گرفتار

پشاور،یونیورسٹی اساتذہ مظاہرے کے دوران 16 افراد گرفتار

  

پشاور(سٹی رپورٹر)فیڈریشن آف آل پاکستان یونیورسٹیز اکیڈیمک سٹاف ایسو سی ایشن اور دیگر تنظیموں کے عہدیداران کے پانچ سے سولہ افراد کو پولیس نے گرفتار کیا جس پر فپواسا اور دیگر تنطیموں کے عہدیداران نے اعلیٰ ھکام سے مطالبہ کیا ہے کہ گرفتار عہدیداران کو رہا کیا جائے یونیورسٹی اساتزہ اور ملازمین پر پولیس کی جانب سے انسو گیس اور لاٹھی چارج کرنے کے خلاف تعلیمی حلقوں میں مایوسی پائی جانے لگے جبکہ یونیورسٹی کیمپس کے طلبہ تنظیموں نے بھی واقعہ کی شدید الفاط میں مذمت کی یونیورسٹی اسلامی جمعیت طلبہ یونیورسٹی کیمپس پشاور کے ناظم شفیق الرحمن نے اساتذہ اور ملازمین پر طاقت کے استعمال کی  مذمت کی اور کہا کہ طاقت کا استعمال کسی مسلہ کا حل نہیں  یونیورسٹی اساتذہ کرام اور ملازمین پر پولیس کا لاٹھی چارج اور شیلنگ قابلِ مذمت ہے جبکہ مطالبہ کیا ہے کہ صوبے کے تمام یونیورسٹیز  شدید مالی خسارے کا شکار ہیحکومت جامعات کے مالی مسائل حل کرنے کے لئے سنجیدہ اقدامات کریں. تبدیلی اور تعلیمی ایمرجنسی کے دعویدار حکومت جامعات کے فنڈز میں اضافہ کی بجائے کٹوتی کررہی ہے۔حکومت صوبے کے تمام جامعات کے مالی خسارے کے خاتمہ کے لئیغیر مشروط پانچ ارب روپے بیل آؤٹ پیکج کا اعلان کریں اور دیگر مسائل کیے جائے  جبکہ یونیورسٹیز کے تباہی کے ذمہ داران کے خلاف تحقیقات کرواکر ملوث افراد کو قرار واقع سزا دی جائے 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -