سندھ حکومت نے صوبے میں پانی کی تقسیم کم کی ہے، حلیم عادل

  سندھ حکومت نے صوبے میں پانی کی تقسیم کم کی ہے، حلیم عادل

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ نے کہاہے کہ سندھ حکومت نے صوبے میں پانی کی تقسیم کم کی ہے، پانی کے معاملے کو ٹیکنیکل مسئلے سے زیادہ سیاسی مسئلہ بنادیا ہے، سندھ نے 4 سال میں 1600 ارب میں سے صرف 700 ارب روپے لگائے۔حلیم عادل شیخ نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ ہمارے پاس سندھ میں مینڈیٹ ہے، ہمیں سندھ کے عوام کی جنگ لڑنی ہے، وزیراعظم نے کہا ایسا ہو ہی نہیں سکتا کسی بھی صوبے میں کسان سے زیادتی ہو، وزیراعظم نے احساس ایمرجنسی کیش پروگرام میں 35 فیصد فنڈ سندھ کو دیا۔حلیم عادل شیخ نے کہا کہ سندھ میں پانی کی کمی اس لیے ہے کیونکہ بارشیں کم ہوئیں اور برف کا پگھلا ؤکم ہوا، سندھ حکومت کو اپنا فارمولا سمجھنا چاہیے جب بارش کم آتاہے تو پانی بھی کم آتاہے۔انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی پنجاب اور سندھ کو لڑوا کر سیکیورٹی رسک بن رہی ہے، اصل پانی چور سندھ حکومت ہے۔حلیم عادل شیخ نے کہا کہ سندھ کے بااثر افراد کو کینال سے 330 ڈائریکٹ کنکشن دیے گئے ہیں، سندھ میں غریب کسان کو کینالوں میں سے کنکشن نہیں دیا۔انہوں  نے کہا کہ سندھ حکومت غریب عوام کا پانی چوری کررہی ہے، سندھ میں ڈاکو آزاد پھر رہے ہیں، ہم پانی کی رکھوالی کریں گے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -