اسلام ہائی کورٹ حملہ کیس میں  عدالت نے بڑا فیصلہ سنادیا

اسلام ہائی کورٹ حملہ کیس میں  عدالت نے بڑا فیصلہ سنادیا
اسلام ہائی کورٹ حملہ کیس میں  عدالت نے بڑا فیصلہ سنادیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )اسلام آباد ہائی کورٹ نے وکلا کے عدالت پر  حملہ کیس میں پانچ وکلا کی ضمانتیں مسنوخ کردیں،ضمانت منسوخ ہونے پر دو خواتین وکلا کو گرفتار کرلیا گیا۔

اسلام آباد کی انسداد دہشت گردی کی عدالت کے جج راجا جواد عباس حسن نے اسلام آباد ہائی کورٹ حملہ کیس میں پانچ  وکلا کی ضمانت کی درخواستوں پر سماعت کے بعد درخواستیں مسترد کرنے کا فیصلہ سنایا۔ضمانت مسترد ہونے پر 2 خواتین وکلا کو گرفتار کرکےاڈیالہ جیل منتقل کردیا گيا۔دیگر تین وکلا معراج ترین، شائستہ تبسم اور یاسمین سندھو کی ضمانت کی درخواستیں بھی مسترد  ہوگئیں تاہم عدالت میں پیش نہ ہونے کے باعث ان کی گرفتاری عمل میں نہ آسکی۔ضمانت مسترد ہونے پر 2 خواتین وکلا بشریٰ سلیم اور شہلا بی بی کو کمرہ عدالت کے باہر سے گرفتار کر لیا گیا جنہیں عدالت نے جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھجوا دیا  ۔

مزید :

قومی -