یورپی ممالک میں الوؤں کے حملے متعدد افراد زخمی

یورپی ممالک میں الوؤں کے حملے متعدد افراد زخمی

  

 پیرس(آن لائن ) یورپی ممالک میں رات کو الو سے بچنے کیلئے چھتری استعمال کرنے کی ہدایت جاری کردی گئی۔نارتھ فرانس،بیلجیم اور شمالی ہالینڈ کے بعض مقامات پر مقامی لوگوں کو یہ ہدایات گذشتہ تین ہفتوں میں الّو کے حملوں سے متعدد افراد کے سر پر زخموں اورچوٹوں کے بعد دی گئی۔گذشتہ دنوں شمالی ہالینڈ کے گاؤں پرمیریند میں ورزش کے لیے جانے والے دو افراد پر الّو نے حملہ کردیا جن میں سے ایک کے سر پرپانچ زخم آئے۔پہلے عام طور پر یورپی ایگل الّو ممالیا اور چھوٹے پرندوں کو شکار کرتے ہیں۔ ان حملوں کا نشانہ بننے والی جگہوں میں معذور افراد کے لئے قائم گھر بھی شامل ہے۔ترجمان خاتوں لیسولٹ ڈی بروجن نے خبر رساں ادارے کو بتایا کہ یہاں کے رہائشیوں اس پرندے نے 15 بار حملہ کیا ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ رات کے وقت چھتریوں، ہیلمٹ، اور ٹوپیوں کا استعمال کرنا پڑتا ہے۔ معذور افراد کے لیے بنائے گھر کو ہالینڈ کی بینک ریبو نے چھتریوں کا عطیہ بھی کیا ہے۔بینک ترجمان کے مطابق یہاں عقاب کی تربیت کرنے والے افراد کو بھیجنے کا ارادہ بھی رکھتے ہیں۔ڈچ اول فاؤنڈیشن کا کہنا ہے کہ اس جانور کے غیر معمولی رویے کی ایک وجہ تنہائی میں قید رکھنا ہو سکتی ہے جس کے بعد وہ انسانوں کو اپنی خوراک کے طور پر دیکھ رہے ہیں۔پرمیریند کی کونسل نے رہائشیوں کو الّو کو قید نہ کرنے کا کہا ہے۔کونسل کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ’طریق کار میں تھوڑا وقت لگ سکتا ہے لیکن اس دوران ہم لوگوں کو الّو سے دور رہنے کا مشورہ دیتے ہیں۔

مزید :

عالمی منظر -