میڈیکل ایسو سی ایشن کی مجلس عاملہ کا اجلاس،سینئر ڈاکٹروں کے ساتھ غنڈہ گردی کی مذمت

میڈیکل ایسو سی ایشن کی مجلس عاملہ کا اجلاس،سینئر ڈاکٹروں کے ساتھ غنڈہ گردی ...

  

 لاہور( خبرنگار) پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن لاہور کی مجلس عاملہ کا اجلاس گزشتہ روز پی ایم اے ہاؤس لاہور میں ہوا جس کی صدارت صدر پی ایم اے لاہور ڈاکٹر محمد تنویر انور نے کی۔ اجلاس میں قراردادیں منظور کی گئیں جن میں ایک قرارداد کے ذریعے اس فیصلے کی تعریف کی گئی کہ ہر جمعہ کو پی ایم اے لاہور کے زیراہتمام (سی ایم ای )ورکشاپ کی جائیں گی جس کے کریڈٹ آورز کی منظوری یو ایچ ایس کرے گی جو پی ایم ڈی سی کا منظور شدہ \"DAI\" ہے۔ قرارداد میں مزید کہا گیا کہ اس وقت سی ایم ای کے کریڈٹ آور جاری کرنے کے انتظامات ملکی سطح پر نہ ہونے کے برابر ہیں اور اس ضمن میں ڈاکٹروں کے تجدیدی سرٹیفکیٹ جاری کرنے پر کوئی ایسی بندش نہیں ہونی چاہیے،ایک قرارداد کے ذریعے میو ہسپتال میں سینئر اساتذہ پر ہونے والی غنڈہ گردی کی شدید مذمت کی گئی اور کے ای ایم یو اور میو ہسپتال کی انتظامیہ کی غیرذمہ دارانہ خاموشی کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا ۔ اور کہا گیا کہ اربابِ اختیار نے اس واقعہ کی نہ تو کوئی انکوائری کروائی ہے اور نہ ہی اس پر کوئی ڈسپلنری ایکشن لیا گیا ہے ۔ ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ فوری اکیڈمک کونسل کی میٹنگ بُلا کر آئندہ ایسے واقعات کی روک تھام کی جاتی۔ایک اور قرارداد کے ذریعے شیخ زید ہسپتال میں ہونے والی ہڑتالوں اور بد انتظامی پر حکومت پنجاب کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا اور قرار دیا گیا کہ ہسپتال کا انتظام 18ویں ترمیم کے بعد پنجاب حکومت نے لیا ا ور ہسپتال کی بحثیت ادارہ بربادی شروع ہو گئی۔ قرارداد میں مزید کہا گیا کہ اگر حکومت پنجاب ہسپتال کے مسائل حل نہیں کر سکتی تو اسے وفاق کو واپس کر دے۔ ایک اور قرارداد کے ذریعے پنجاب پبلک سروس کمیشن میں سینئر رجسٹرار اور میڈیکل آفیسرز کی بھرتی کیلئے تحریری ٹسٹ کے اجراء کی شدید مخالفت کرتے ہوئے اُسے یکسر مسترد کر دیا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -