آرمی چیف کا بھارت کے حو الے سے جراتمندانہ بیان قوم کی ترجمانی ہے،وسیم اختر

آرمی چیف کا بھارت کے حو الے سے جراتمندانہ بیان قوم کی ترجمانی ہے،وسیم اختر

  

لاہور(پ ر) امیر جماعت اسلامی صوبہ پنجاب و پارلیمانی لیڈر صوبائی اسمبلی ڈاکٹر سید وسیم اخترنے آرمی چیف جنرل راحیل شریف کے اس بیان پرکہ’’بھارتی سرحدی جارحیت کا منہ توڑ جواب دیں گے بھارت کوئی خوش فہمی میں نہ رہے قوم اور پاک فوج وطن عزیز کے دفاع کے لئے متحدہیں‘‘کاخیر مقدم کرتے ہوئے کہاہے کہ آرمی چیف نے درحقیقت پوری قوم کے جذبات کی ترجمانی کی ہے۔انہوں نے کہاکہ کنٹرول لائن اور ورکنگ باؤنڈری پر بھارت کی بلااشتعال فائرنگ اور گولہ باری سے دہشت گردی کے خلاف جنگ اور علاقائی امن واستحکام متاثر ہورہاہے بھارتی فورسز کی جارحیت کامقصد دہشت گردوں کے خلاف جاری آپریشن سے توجہ ہٹانا ہے۔     انہوں نے کہاکہ سیالکوٹ ورکنگ باؤنڈری پر بھارت کی بلااشتعال گولہ باری کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے پاک فوج بھارت کے جنگی جنون کامنہ توڑجواب دے ساری دنیا جانتی ہے کہ ہندوستان دہشت گردوں کی تربیت اور ان کوپیسہ فراہم کررہا ہے۔ڈاکٹر سید وسیم اختر نے کہاکہ پاکستان امن پسند ملک ہے ۔ گزشتہ 14برسوں سے وطن عزیزدہشت گردی کے خلاف جنگ کے نتیجے میں50ہزار سے زائد بے گناہ پاکستانیوں کی قربانی اور کھربوں روپے کامالی نقصان اٹھاچکا ہے ۔ حکمران اس بات کوباور کرائیں کہ ہم ہندوستان کی گیڈربھبھکیوں سے مرعوب ہونے والے نہیں۔پاکستان اپنے دفاع کی مکمل صلاحیت رکھتاہے پاکستان ایک ایٹمی طاقت ہے جو کہ دشمن کے لئے ترنوالہ ثابت نہ ہو گا ۔انہوں نے کہاکہ جب تک بھارت کی سازشوں کوناکام نہیں بنایاجائے گا وہ اپنی گھناؤنی حرکتوں سے باز نہیں آئے گا۔انہوں نے مزیدکہاکہ پاکستان جب سے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں مصروف ہے بھارت نے مشرقی سرحد پرمسلسل جارحیت کاسلسلہ شروع کررکھاہے پاکستان نے افغان سرحد پر ڈیڑھ لاکھ فوج دہشتگردوں کی سرکوبی کے لئے لگارکھی ہے۔ ۔       دہشتگردوں کی پشت پناہی کرنے والے ہندوستان سے خیر کی کوئی توقع نہیں۔بھارت کی جانب سے مذاکرات کے نام پر ہمیشہ دنیاکی آنکھوں میں دھول جھونکی گئی ہے۔آئندہ چنددنوں میں ہونے والے خارجہ سیکرٹریوں کے درمیان مذاکرات سے کوئی بڑی توقعات وابستہ نہیں کی جاسکتیں۔بامقصد مذاکرات کے لئے بھارت کشمیری عوام کو حق خودرادیت دینے کے ساتھ ساتھ بلوچستان سمیت پورے ملک میں ہر قسم کی دہشت گردی کی کاروائیاں ختم اور آبی جارحیت کومکمل روکے بصورت دیگر مذاکرات بے نتیجہ رہیں گے اور اس سے کچھ حاصل نہیں ہوگا ۔ جاری کردہ

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -