پنجاب حکومت کا ایل این جی پاور پلانٹ لگانے کا فیصلہ،1000میگاواٹ بجلی پیدا ہوگی

پنجاب حکومت کا ایل این جی پاور پلانٹ لگانے کا فیصلہ،1000میگاواٹ بجلی پیدا ہوگی

  

 لاہور(پ ر)وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی زیرصدار ت یہاں صوبے میں توانائی کے منصوبوں پر پیش رفت کا جائزہ لینے سے متعلق اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا جس میں وفاقی وزیر پانی و بجلی خواجہ محمد آصف اور وفاقی وزیر پٹرلیم شاہد خاقان عباسی نے خصوصی شرکت کی۔ اجلاس میں توانائی کے منصوبوں کی جلد تکمیل کیلئے تمام ضروری اقدامات پر تیز رفتاری سے پیش رفت پر اتفاق کیا گیا۔ وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ توانائی بحران میں کمی لانے کیلئے ہرممکن اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں۔ پنجاب میں روایتی ذرائع کے ساتھ قابل تجدید ذرائع سے توانائی کے منصوبے لگائے جا رہے ہیں۔صوبے میں ایل این جی سے بجلی کے کارخانے لگانے کی منصوبہ بندی کر لی گئی ہے۔ پنجاب حکومت نے شیخوپورہ کے نزدیک ایل این جی پاور پلانٹ لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس پلانٹ سے ایک ہزار میگاواٹ سے زائد بجلی پیدا ہوگی۔ وفاقی کابینہ پنجاب میں 3 مختلف مقامات پر ایل این جی سے توانائی کے منصوبے لگانے کی منظوری دے چکی ہے جن سے مجموعی طور پر 3600 میگاواٹ بجلی پیدا ہوگی۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ 200 ایم ایم سی ایف ڈی ایل این جی پنجاب کو فراہم کرنے کے فیصلے کی منظوری پر وزیراعظم محمد نواز شریف اور وفاقی وزیر پٹرولیم شاہد خاقان عباسی کے شکر گزار ہیں۔ انشاء اللہ اگلے 3 برس کے دوران توانائی کے کئی منصوبے بجلی پیدا کر رہے ہوں گے۔ توانائی بحران میں کمی لا کر عوام کو ریلیف فراہم کریں گے۔ قوم کا ایک ایک لمحہ انمول اور قیمتی ہے۔ توانائی منصوبوں پر عملدرآمد کے حوالے سے شفافیت اور تیز رفتاری سے آگے بڑھا جائے گا۔ انہوں نے ہدایت کی کہ ایل این جی پاور پلانٹس کیلئے متعلقہ ادارے ضروری اقدامات فوری طور پر اٹھائیں اور ٹرانسمیشن لائنز کی اپ گریڈیشن اور پائپ لائنز بچھانے کا کام فی الفور شروع کیا جائے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ ایل این جی کے توانائی منصوبوں کو فاسٹ ٹریک پر مکمل کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ قائداعظم سولر پارک بہاولپور میں سو میگاواٹ کا سولر منصوبہ 6 ماہ کی ریکارڈ مدت میں مکمل کیا گیا ہے اور یہ پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا اور پہلا سولر منصوبہ ہے جو پنجاب حکومت نے اپنے وسائل سے لگایا ہے۔وزیراعظم محمد نواز شریف اس منصوبے کا جلد افتتاح کریں گے۔ سالٹ رینج میں چین کے تعاون سے مقامی کوئلے سے بجلی پیدا کرنے کے منصوبے پر کام جاری ہے۔ توانائی منصوبوں کی تیز رفتاری سے تکمیل یقینی بنانے کیلئے پیٹ کاٹ کر وسائل فراہم کریں گے۔ وفاقی وزیر پانی و بجلی خواجہ محمد آصف اور وفاقی وزیر پٹرولیم شاہد خاقان عباسی نے وزیراعلیٰ کو توانائی منصوبوں کی جلد تکمیل کے حوالے سے ہرممکن تعاون کی یقین دہانی کرائی۔ اجلاس کے دوران پنجاب میں ایل این جی سے توانائی کے منصوبے لگانے کے حوالے سے بریفنگ دی گئی۔ا ٹارنی جنرل آف پاکستان، صوبائی وزیر معدنیات چوہدری شیر علی، ایم این اے حمزہ شہباز، ا راکین صوبائی اسمبلی رانا ثناء اللہ، ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا، چیف سیکرٹری، وفاقی سیکرٹری پانی و بجلی، چیئرمین نیپرا، مینجنگ ڈائریکٹرز این ٹی ڈی سی، سوئی ناردرن گیس پائپ لائنز لمیٹڈ، نیسپاک، پی پی آئی بی کے علاوہ پنجاب اور وفاقی حکومتوں کے متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ ملک کی تیزرفتار ترقی کیلئے توانائی بحران کا خاتمہ ہمارا عزم اور توانائی کے منصوبوں کوبر ق رفتاری سے پایہ تکمیل تک پہنچانا ہمارا مشن ہے۔ توانائی بحران سے نمٹنے کیلئے سنجیدگی سے آگے بڑھ رہے ہیں ۔وہ یہاں ایک اعلی سطح کے اجلاس سے خطاب کر رہے تھے جس میں توانائی منصوبوں پر پیش رفت کے حوالے سے اقدامات کا جائزہ لیا گیا۔وزیراعلیٰ شہباز شریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ توانائی منصوبوں کی برق رفتاری سے تکمیل کیلئے ہر ممکن وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں ۔ ترقیاتی منصوبوں کیلئے توانائی کی کمی کے مسئلے پر قابو پانا بے حد ضروری ہے ۔پنجاب حکومت نے قائداعظم سولر پارک بہاولپور میں اپنے وسائل سے 100میگاواٹ کا سولر منصوبہ لگایا ہے ۔ہمارا ہر قدم توانائی بحران کے مسئلے سے نمٹنے کیلئے اٹھ رہا ہے ۔ملک کی ترقی و خوشحالی کے لئے توانائی کے منصوبوں کو ہر حال میں مکمل کرنا ہے۔ توانائی منصوبوں کی تکمیل کیلئے وسائل کی کمی نہیں آنے دیں گے۔ اجلاس میں پنجاب انرجی پراجیکٹس ڈویلپمنٹ فنڈکے قیام کے حوالے سے مختلف تجاویز کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس میں ایم پی اے ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا، شوکت ترین، چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات، ایڈیشنل چیف سیکرٹری توانائی، سیکرٹری خزانہ، صدر بینک آف پنجاب اور مختلف بینکوں کے اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔

مزید :

صفحہ اول -