لاچار لڑکی نے ’مرنے کا حق‘ دینے کی اپیل کردی

لاچار لڑکی نے ’مرنے کا حق‘ دینے کی اپیل کردی
لاچار لڑکی نے ’مرنے کا حق‘ دینے کی اپیل کردی

  

سنٹیاگو(مانیٹرنگ ڈیسک) چلی کی ایک 14سالہ لاچار لڑکی نے صدر مملکت سے ’مرنے کا حق‘ دینے کی اپیل کردی ۔

چلی میں ایک 14 سالہ بیمار لڑکی ویلنٹینا موریرا نے اپنی ایک ویڈیو ملک کی صدر سے اپیل کی ہے کہ اسے مرنے کا حق دیا جائے، اسے سسٹک فائبروسس کا لاعلاج مرض لاحق ہے ۔

ویڈیو میں لڑکی کاکہناتھاکہ درخواست کی تھی کہ وہ صدر سے بات کرناچاہتی ہیں کیونکہ بیماری کی حالت میں زندگی گزارتے ہوئے تنگ آ چکی ہوں، ان کے بڑے بھائی عمر کی بھی موت چھ سال قبل اسی بیماری سے ہوئی تھی۔

ویلینٹینا کے اس پیغام کو ہزاروں افراد نے دیکھا ہے اور ویڈیو سامنے آنے کے بعد چلی میں مرض کے باعث تکلیف سے بچنے کے لیے موت یعنی یوتھنیزیا پر بحث شروع ہو گئی ہے،یوتھنیزیا چلی میں غیر قانونی ہے۔

صدارتی ترجمان کا کہنا ہے کہ ویلینٹینا کی یہ درخواست قبول نہیں کی جا سکتی تاہم حکومت نے علاج کے اخراجات اُٹھانے کااعلان کردیا۔ پیغام کے بعد صدرمملکت ہسپتال میں ویلینٹینا سے ملنے بھی آئیں۔

مزید :

انسانی حقوق -