دنیا کا انوکھا ترین بازار جہاں دلہنوں کو فروخت کے لیے پیش کیا جاتاہے

دنیا کا انوکھا ترین بازار جہاں دلہنوں کو فروخت کے لیے پیش کیا جاتاہے
دنیا کا انوکھا ترین بازار جہاں دلہنوں کو فروخت کے لیے پیش کیا جاتاہے

  

صوفیہ(نیوزڈیسک)آپ نے اتوار بازار یا سستے بازار کا نام تو ضرور سنا ہوگالیکن آج ہم آپ کو ایک ایسے بازار کے بارے میں بتائیں گے جہاں والدین اپنی لڑکیوں کو کسی دولہے کی تلاش میں لے کر جاتے ہیں جبکہ کچھ والدین اپنے لڑکوں کو اس آس پر لے کر آتے ہیں کہ انہیں اپنے لڑکے کے لئے ’سستی لڑکی‘مل جائے گی۔’دلہن بازار‘ کے نام سے مشہور یہ بازار سال میں چار بار منعقد کیا جاتا ہے۔اس میلے کے بارے میں بتایا جاتا ہے کہ یہ زمانہ قدیم سے چلا آرہا ہے جس میں لڑکیاں اور لڑکے اپنے جیون ساتھی کی تلاش کرتے ہیں۔

شادی کے بعد بیگم کو انتہائی خوش رکھنے کے خواہشمنددولہوں کے لیے تربیتی مرکز قائم

بلغاریہ کے شہر سٹارا زاگورا کے قریب میلے میں ’روما‘ سے تعلق رکھنے والے ’کلیدزی‘قبیلے کے 18ہزار افراد شرکت کرتے ہیں۔یہ افراد بلغاریہ کے معاشرے میں انتہائی کسمپرسی کی زندگی گزارتے ہیں اور اپنی ہی کمیونٹی میں کوئی مناسب رشتے کی تلاش میں سرگرداں ہوتے ہیں۔یہ میلہ نوجوان جوڑوں کو یہ موقع بھی فراہم کرتا ہے کہ وہ ساتھ ساتھ ڈانس کریں جبکہ عام حالات میں انہیں ایسا کرنے کی ہرگز اجازت نہیں ہے۔ ’کلیدزی‘قبیلے کے بارے میں مشہور ہے کہ وہ اپنی لڑکیوں کو 15سال یا بعض اوقات اس سے بھی قبل سکول سے اٹھا لیتے ہیں جس کی وجہ یہ بتائی جاتی ہے کہ وہ لڑکیوں کو ’شیطانی‘ باتوں سے دور رکھ سکیں۔اس میلے میں جب لڑکا اور لڑکی ملتے ہیں تو ان کے والدین تھوڑا دور رہ کر یہ نظارہ دیکھتے ہیں ۔اگر دونوں ایک دوسرے کو پسند آجائیں تو لڑکی کے والدین کو لڑکے والے نقد رقم بھی دیتے ہیں۔ عام طور پر لہن کا ریٹ 2200سے 4300برطانوی پاﺅنڈ (ساڑھے تین لاکھ روپے سے سات لاکھ روپے پاکستانی)ہوتا ہے لیکن حال ہی میں آنے والے مالی بحران کی وجہ سے اس سے بھی کم قیمت میں دلہن خریدی جا سکتی ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -