پی آئی اے کے اربوں روپے کے اثاثوں کی دستاویزات غائب ہونے کا انکشاف

پی آئی اے کے اربوں روپے کے اثاثوں کی دستاویزات غائب ہونے کا انکشاف
پی آئی اے کے اربوں روپے کے اثاثوں کی دستاویزات غائب ہونے کا انکشاف

  

اسلام آباد (آن لائن) قومی ایئرلائن (پی آئی اے) کے اربوں روپے کے اثاثوں کی دستاویزات غائب ہونے کا انکشاف ہوا ہے جس میں پی آئی اے کے قیمتی اثاثے من پسند لوگوں کو دینے اور اونے پونے بیچنے کا فیصلہ کر لیا ہے جس سے قومی خزانے کو اربوں روپے کا نقصان کا اندیشہ پیدا ہو گیا ہے تفصیلات کے مطابق پاکستان ایئرلائن جو کہ اربوں روپے کے قیمتی اثاثے اندرون ملک اور بیرون ملک میں رکھے ہیں کے پیچھے طاقتور مافیاءسرگرم ہو گیا ہے جس کی سب سے بڑی مثال راولپنڈی اور اسلام آباد میں موجود دفاتر ہیں نجکاری کمشن نے اربوں روپے کے پلازوں کی قیمت صرف چھ کروڑ روپے ظاہر کی ہے جس سے اپوزیشن ارکان اور (ن) لیگ کے اندر سے ہی تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے ذرائع کے مطابق مافیاءقرضوں کے اندر ڈوبی ہوئی قومی ایئرلائن کو مزید دفنانے کے درپے ہے۔قومی ایئرلائن کے اثاثوں میں سے بیرون ملک موجود اثاثے جن میں نیویارک میں موجود ہوٹل روز ویلٹ اور پیرس میں موجود ہوٹل سکراب اربوں ڈالرز کی مالیت کے ہے کو بھی نیلام کرنے پر تلی ہوئی ہے حکومتی ذرائع کے مطابق حکومت فی الحال بیرون ملک اثاثے بیچنے کا ارادہ نہیں رکھتی لیکن اندرون ملک کے اثاثے ضرور بیچے جائیں گے۔

مزید : اسلام آباد