شوہر کی نگرانی کیلئے کڑاپہنانا غیر شرعی، بل چیلنج کرنے کا فیصلہ

شوہر کی نگرانی کیلئے کڑاپہنانا غیر شرعی، بل چیلنج کرنے کا فیصلہ
شوہر کی نگرانی کیلئے کڑاپہنانا غیر شرعی، بل چیلنج کرنے کا فیصلہ

  

اسلام آباد(ویب ڈیسک) مشکوک اور تشدد کرنےوالے شوہروں کے ہاتھ میں نگرانی کڑا پہنانے کی قانون سازی غیر شرعی ہے، پنجاب اسمبلی کے تحفظ خواتین بل کو اعلیٰ عدلیہ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا، پٹیشن اگلے تین روز میں دائر کردی جائے گی ۔ اخبار نئی بات  کے مطابق پٹیشن کی تیاری کرنے والے سپریم کورٹ کے وکیل طارق اسد نے بتایا ہے کہ مشکوک اور تشدد کرنے والے شوہروں کے ہاتھ میں نگرانی کڑا پہنانے کی قانون سازی غیر شرعی ہے۔ پنجاب اسمبلی کا تحفظ خواتین بل حاصل کر لیا ہے قانونی و شرعی نکات پر تیاری حتمی مراحل میںہے۔ انہوں نے کہا کہ پرویز مشرف اور پی پی پی تو لبرل ازم کے نعرے لگاتے تھے موجودہ حکومت عمل کررہی ہے۔ پٹیشن میں موقف حکومت کو چیلنج کر رہے ہیں کہ وہ اسلامی تاریخ میں مردوں پر کوئی ایک ایسی پابندی دکھائے ۔ صرف شوہروں کو کڑا پہنانے کی پابندی آئین پاکستان کے برابری کے انصاف کے بھی خلاف ہے ۔ تحفظ خواتین بل کے خلاف پٹیشن راولپنڈی ہائی کورٹ میں دائر کی جائے گی۔ دینی جماعتوں کی اکثریت تحفظ خواتین بل کو غیر شرعی قرار دے چکی ہے۔

مزید : اسلام آباد