’3سال میں پاکستان سے 1436 ارب بھارت بھیجے گئے‘ ورلڈ بینک کی رپورٹ نے ہنگامہ برپاکردیا، ایسا کیسے ممکن ہے؟ آپ بھی جانئے

’3سال میں پاکستان سے 1436 ارب بھارت بھیجے گئے‘ ورلڈ بینک کی رپورٹ نے ہنگامہ ...
’3سال میں پاکستان سے 1436 ارب بھارت بھیجے گئے‘ ورلڈ بینک کی رپورٹ نے ہنگامہ برپاکردیا، ایسا کیسے ممکن ہے؟ آپ بھی جانئے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نئی دلی (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستانی شہریوں کی ایک بھاری تعداد بیرون ملک دن رات مشقت کرتی ہے تو ان کی کمائی ہوئی رقم پاکستان پہنچتی ہے، لیکن دوسری جانب یہ حیرت انگیز صورتحال سامنے آئی ہے کہ اگرچہ ہمارے ہاں کوئی بھارتی شہری کام کرتا نظر نہیں آتا اور نہ ہی بھارتی کاروباری ادارے سرگرم نظر آتے ہیں، مگر اس کے باوجود اربوں ڈالر ترسیل زر کی آڑ میں بھارت منتقل ہو رہے ہیں۔ گزشتہ تین سال کے دوران تقریباً 14.36 ارب ڈالر (تقریباً 1436 ارب پاکستانی روپے) کی ناقابل یقین رقم پاکستان سے بھارت منتقل ہو چکی ہے۔ 

نیوز سائٹ ”اکنامک ٹائمز“ کے مطابق یہ حیران کن انکشاف عالمی بنک کی ایک تازہ ترین رپورٹ میں کیا گیا ہے، جس پر بھارتی میڈیا میں بھی حیرانگی کا اظہار کیا جا رہا ہے۔ ورلڈ بنک کا کہنا ہے کہ یہ رپورٹ ایک تجزیاتی اندازہ ہے جس کی بنیاد منطقی مفروضوں پر ہے۔ ”مائیگریشن اینڈ ریمیٹنسز فیکٹ بک 2016“نامی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان میں رہنے والے (نامعلوم) لوگوں نے سال 2015ء میں 4.9ارب ڈالر (تقریباً 5سو ارب پاکستانی روپے(بھارت بھیجے ہیں۔ اسی طرح 2014ء میں بھیجی گئی رقم کا اندازہ 4.79ارب ڈالر، جبکہ 2013ء میں 4.67ارب ڈالر (تقریباً ساڑھے چار سو ارب پاکستانی روپے) لگایا گیا ہے۔

بھارتی میڈیا بھی اس بات پر حیرانی کا اظہار کر رہا ہے کہ پاکستان میں کام کرنے والے بھارتی شہریوں کی تعداد انتہائی معمولیہونے کے باوجود اتنی بھاری رقوم بھارت کیسے آ گئیں، لیکن ورلڈ بنک کے ”مائیگریشن اینڈ ریمیٹینسز پروگرام“ کے منیجر دلیپ راتھا کا کہنا ہے کہ ان کے تجزیے اور اندازے یہی صورتحال دکھا رہے ہیں۔

ورلڈ بنک کے مطابق سال 2015ء میں بھارت کو سب سے زیادہ زرمبادلہ متحدہ عرب امارات میں مقیم بھارتی شہریوں نے بھیجا، جبکہ اس کے بعد امریکہ اور سعودی عرب میں مقیم بھارتی شہریوں کا نمبر رہا، اور حیرت کی بات ہے کہ اس کے بعد چوتھے نمبر پر پاکستان ہے، جہاں سے کچھ نامعلوم افراد نے بھارت کو صرف گزشتہ ایک سال کے دوران تقریباً5ارب ڈالر (تقریباً500 ارب پاکستانی روپے) بھیجے ہیں۔ ورلڈ بنک نے پاکستان سے بھارت منتقل ہونے والی رقم کو دنیا کے کسی بھی دو ممالک کے درمیان ترسیل زر کی چودہویں بڑی مقدار قرار دیا۔

مزید : بزنس