جناح ہسپتال سے نومولود بچی کا اغواء ،24گھنٹے گزر گئے ،پولیس ملزمہ کا سراغ نہ لگا سکی

جناح ہسپتال سے نومولود بچی کا اغواء ،24گھنٹے گزر گئے ،پولیس ملزمہ کا سراغ نہ ...

لاہور(وقائع نگار) جناح ہسپتال سے نومولود بچی کو برقعہ پوش خاتون کی جانب سے اغوا کیے جانے کے واقعہ کو 24گھنٹے سے زائد گزر جانے کے باوجود پولیس ملزمہ کا سراغ نہ لگا سکی جبکہ سی سی ٹی وی فوٹیج کے ذریعے ملزمہ کاسراغ لگانے کے لیے تفتیش کا دائرہ کار وسیع کر دیا گیا ہے ۔تفصیلات کے مطابق رائیونڈ روڈ شیر شاہ کالونی کی شازیہ کے گھر 4 روز قبل بچی کی پیدائش ہوئی۔ اتوار کے روز گائنی وارڈ کے باہر نوزائیدہ کی نانی اسے لیکر بیٹھی ہوئی تھی ۔ خاتون کے حوالے کر کے کسی کام سے گئی، مگرخاتون بچی کو لیکر رفوچکر ہو گئی ۔بچی کے ورثا کا کہنا ہے کہ ہسپتال انتظامیہ کی ناقص سکیورٹی کی وجہ سے بچی اغوا ہوئی۔ بچی کے ورثاء نے واقعہ کا ذمہ دار ہسپتال سکیورٹی کو ٹھہراتے ہوئے کہا کہ ہسپتال میں لگے تمام سی سی ٹی وی کیمرے خراب ہیں۔اطلاع ملنے پر پولیس بھی جائے وقوعہ پر پہنچ گئی، ابتدائی تفتیش کے مطابق اغواکار خاتون نے اپنا چہرہ نقاب سے ڈھانپ رکھا تھا۔ تاہم ابھی یہ واضح نہیں ہو سکا کہ اغواکار خاتون کے ساتھ اس کا کوئی مدد گار تھا یا نہیں۔بچی کے ورثا کا کہنا ہے کہ ہسپتال انتظامیہ نوزائیدہ بچوں کو لے جانے کے لئے گیٹ پاس جاری کرتی ہے لیکن اغوا کار خاتون سے کسی سکیورٹی گارڈ نے گیٹ پاس طلب نہیں کیا۔اس حوالے سے پولیس نے سی سی ٹی وی فوٹیج کی مدد سے ملزمہ کی تلاش شروع کر دی ہے تاہم اس کاتاحال سراغ نہیں لگایا جا سکا ہے۔

مزید : علاقائی