ممتاز قادری کی پھانسی پاکستان کی تاریخ کا بدترین سانحہ ہے،غلام عباس

ممتاز قادری کی پھانسی پاکستان کی تاریخ کا بدترین سانحہ ہے،غلام عباس

لاہور( اپنے نامہ نگار سے) ممتاز قادری کی پھانسی پاکستان کی تاریخ کا بدترین سانحہ ہے جس سے ملک کا اسلامی تشخص بری طرح مجروح ہوا ،سیکولر ایجنڈا لاگو کیا جارہا ہے دینی قوتیں پاکستان کا اسلامی تشخص بچانے کیلئے نفاذ اسلام کے یک نکاتی ایجنڈے پرمتحد ہوکر جدوجہد کریں ۔اسلامی تحریک طلبہ پاکستان کے چیئرمین غلام عباس صدیقی نے عاشق رسولﷺ ممتاز قادری کی پھانسی کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ ممتاز قادری کی پھانسی سے عاشقان رسول ﷺ کی غیرت کا للکارا گیا ہے اس سے پاکستان کا اسلامی تشخص مجروح ہوا پاکستان کے سیاستدان اور حکمران جمہوریت کے گھوڑے پر بیٹھ کر پاکستان کو لبرل اور سیکولر بنانے کیلئے برق رفتاری سے کام کر رہے ہیں مخلوط میراتھن ریس،ویلنٹائن ڈے کی حمایت ،تحفظ خواتین بل کے نام پر غیر شرعی قانون سازی اور ممتاز قادری کی پھانسی جیسے غیر دانشمندانہ ،اسلام کش اقدام حکمرانوں اور سیاستدانوں کے عزائم کو ظاہر کر رہے ہیں۔

پاکستان کی دینی جماعتیں نفاذ اسلام کے یک نکاتی ایجنڈے پر متحد ہوکر کوشش کریں بصورت دیگر اغیار کے غلام حکمران پاکستا ن کے اسلامی تشخص کابیڑا غرق کردیں گے۔انہوں نے کہا ہے کہ اگر حکمران اسلام کی وکالت نہیں کر سکتے تو اقتدار سے الگ ہوجائیں ممتاز قادری شہیدؒ کی پھانسی حکمرانوں کے زووال کا سبب بنے گی ۔صدر اسلامی تحریک طلبہ شاہد نذیر نے کہا کہ انگریز دور میں ناموس رسالت ﷺ کا تحفظ کرنے پر عاشقان رسولﷺ کو پھانسی دی گئی اور پاکستان بننے کے بعد بھی عاشق رسول ﷺ کوپھانسی دی گئی جو نظریہ پاکستان سے کھلی بغاوت ہے ۔قوم ملک کے اسلامی تشخص کو بچانے کیلئے سڑکوں پر نکل آئے ۔انہوں نے کہا کہ ممتازقادری کا خون اسلامی انقلاب (نظام خلافت) لانے میں سنگ میل ثابت ہوگا ۔حکمرانوں نے جید علمائے کرام کی شرعی رائے کو نظر انداز کرکے قرآن وسنت سے راہ فرار اختیار کی ۔ممتاز قادری کی پھانسی سے ثابت ہوگیا کہ پاکستان میں قرآن وسنت کے خلاف اقدام کئے جارہے ہیں جو نظریہ پاکستا کی کھلی خلاف ورزی ہیں ۔اسلامی تحریک طلبہ ممتاز قادری شہیدؒ کے مشن کو زندہ رکھنے کیلئے نسل نو میں عشق رسول کا جذبہ پیدا کرتی رہے گی ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4