پارٹنرز سکولز کا کنونشن، پنجاب بھر کے پیف پارٹنرز کی شرکت

پارٹنرز سکولز کا کنونشن، پنجاب بھر کے پیف پارٹنرز کی شرکت

لاہور (پ ر)پیف پارٹنر نے ملتان میں منعقدہ کنونشن میں اپنے مطالبات حکومت کو پیش کر دیئے ہیں۔ اس موقع پر فرید خان بنگش، مزمل اقبال صدیقی مرکزی صدر پروگریسو پرائیویٹ سکولز ایسوسی ایشن، شیخ محمد ارشد مرکزی جنرل سیکرٹری PSA نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت PEF پارٹنرز کے روز مرہ بڑھتے ہوئے مسائل فل الفور حل کرے تاکہ وہ تعلیم کا سلسلہ جاری رکھ سکیں۔ اُن کا کہنا تھا کہ نجی تعلیمی اداروں کی فیس کی بنیاد پر درجہ بندی کی جائے نہ کہ رقبے کی بنیاد پر۔ سکولز کی رجسٹریشن کا اختیار ای سی او سے واپس لیکر ڈی او ایجوکیشن کے سپرد کیا جائے۔ تمام مشاورت میں جنوبی پنجاب کو شامل کیا جائے۔ سیکنڈری سکولز کے سکینڈری بورڈز سے الحاق کے طریقہ کار کو آسان بنایا جائے۔ میٹرک کے امتحان میں گریڈ سسٹم بحال کیا جائے۔

انہوں نے مزید مطالبہ کیا کہ پرائیویٹ سکولز کی بلڈنگز کو تعمیر کے لئے آسان شرائط پر بلا تاخیر قرضے دیئے جائیں، پنجاب ایگزامینیشن کمشن کو فل الفور ختم کر کے ایلیمنٹری بورڈز تشکیل دیئے جائیں۔ نجی تعلیمی اداروں کی کمرشلائزیشن کو فل الفور ختم کر کے گھریلو ٹیرف لاگو کیا جائے۔ نجی تعلیمی اداروں کے اساتذۃ کو اولڈ ایج اور سوشل سکیورٹی سے مستثنیٰ قرار دیا جائے۔ سکیورٹی کے نام پر پولیس گردی ختم کی جائے اور حکومت تمام پرائیویٹ تعلیمی اداروں کو خود سکیورٹی فراہم کرے۔ کنونشن میں پرائیویٹ سکولز اور PEF پارٹنرز نے مختلف قرار دادیں منظور کیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4