بہونے بیٹے کی مدد سے قبضہ کرکے معمر ساس اور سسر کو گھر سے نکال دیا

بہونے بیٹے کی مدد سے قبضہ کرکے معمر ساس اور سسر کو گھر سے نکال دیا

لاہور(نامہ نگار) ٹاون شپ میں چار مرلے کے مکان پر بہویاسیمن نے بیٹے کی مدد سے قبضہ کرکے 85سالہ سسر سعید اور 80سالہ ساس نذیراں بی بی کو گھر سے نکال دیا ،دونوں معمر میاں بیوی انصاف کے لئے سیشن عدالت پہنچ گئے اور عدالت میں بہو اور پوتے کے خلاف اندراج مقدمے کی درخواست دائر کردی۔ایڈیشنل سیشن جج سرفراز اختر کی عدالت میں شیخ یاسرخلیل ایڈووکیٹ نے ٹاؤن شپ کے دو معمر میاں بیوی سعید احمد اور نذیراں بی بی کو پیش کیا دونوں کو اس کی بہو یاسمین اور پوتے نے گھر سے تشدد کرکے نکال دیا تھا۔عدالت میں معمرمیاں بیوی نے اندراج مقدمے کی درخواست دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ ان کے بیٹے قاری رشید نے جعل سازی سے ان کا چار مرلے کا مکان اپنے نام کرالیا۔

ان کو دھوکہ دیا کہ والدین کی چیز ان کی اولاد کی ہوتی ہے انہوں نے یہاں ہی رہنا ہے لہذا ماکان اس کے نام کردیا جائے اس نے جعل سازی سے ہمارے دستخط کے بغیر ہی مکان اپنے نام کرلیا بعد میں قضاالہی سے انتقال کرگیا اس کے مرنے کے بعد اس اس کی بہواور پوتے نے ان پر تشدد شروع کردیا اور مار پیٹ کر گھر سے نکال دیا اور مکان پر قبضہ کرلیا وہ دونوں اپنا گھر ہوتے ہوئے دربدرکی ٹھوکریں کھاتے پھر رہے ہیں ان کو علاقے کے لوگوں نے ایک کمرہ رہنے کے لیے دے رکھا ہے۔ عدالت سے استدعا ہے کہ مکان پر ناجائز قبضہ کرنے پر بہو اور پوتے کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دیا جائے اور ان کو واپس مکان دلوایا جائے۔عدالت نے اندراج مقدمے کی درخواست پر عدالت نے ٹاون شپ پولیس سے دو مارچ کو رپورٹ طلب کرلی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4