سندھ احتساب اتھارٹی قائم کرنے کیلئے مسودہ قانون تیار کر لیاگیا

سندھ احتساب اتھارٹی قائم کرنے کیلئے مسودہ قانون تیار کر لیاگیا

لاہور(نامہ نگار خصوصی )سندھ احتساب اتھارٹی قائم کرنے کے لئے مسودہ قانون تیار کر لیاگیا ہے جسے کابینہ کی منظوری کے بعد اسمبلی میں پیش کیا جائے گا،سندھ احتساب اتھارٹی کا سربراہ اعلیٰ عدلیہ کا ریٹائرڈ جج یا 20 گریڈ یا اس سے بڑے گریڈ کا ریٹائرڈ سرکاری افسر ہوگا۔چیئرمین کا تقرر پارلیمانی کمشن کرے گاجس میں حزب اختلاف اور حزب اقتدار کے ارکان برابر تعداد میں شامل کئے جائیں گے ۔مسودہ قانون کے مطابق احتساب اتھارٹی کے سربراہ کے تقرر کے لئے پارلیمانی کمیشن تشکیل دیا جائے گا جس میں حکومت اور اپوزیشن کے اراکین صوبائی اسمبلی کو مساوی نمائندگی دی جائے گی۔ مجوزہ قانون کے مطابق احتساب اتھارٹی کے قیام کے بعد صوبائی محکمہ اینٹی کرپشن اس میں ضم ہو جائے گا، اتھارٹی صوبائی اداروں کے احتساب کی مجاز ہوگی، سندھ حکومت کے ذرائع کے مطابق احتساب اتھارٹی کے قیام کے بعد نیب صوبائی محکموں کا احتساب نہیں کر سکے گا۔ مجوزہ قانون کے مطابق سندھ احتساب اتھارٹی مالی اور انتظامی حوالے سے خودمختار اور تمام تر انتظامی دباؤ سے آزاد ہوگی۔ ذرائع کے مطابق اتھارٹی کا ڈرافٹ حکومت سندھ کے قانونی مشیر مرتضیٰ وہاب کی سربراہی میں قائم کمیٹی نے تیار کیا ہے ، مسودہ تیار کرنے سے قبل قومی احتساب بیورو اور خیبرپختونخواہ کے احتساب کمیشن کے قوانین کا بھی مد نظر رکھا گیاہے۔

مزید : صفحہ آخر