27روز میں افغانستان سے آنیوالے ایک لاکھ سے زائد افراد کو رجٹرڈ کیا گیا

27روز میں افغانستان سے آنیوالے ایک لاکھ سے زائد افراد کو رجٹرڈ کیا گیا

خیبر ایجنسی ( بیورورپورٹ)طورخم بارڈر پر 27دنوں میں افغانستان سے آنے والے ایک لاکھ اکیس ہزار پچانوے افراد کو رجسٹرڈ کیا گیا ہے ، افغانوں اور پاکستانیوں کی بلا تفریق رجسٹریشن کی جاتی ہے ، آنے والوں کی مکمل تفصیلات قلم بند کی جاتی ہیں ،طورخم انتظامیہ ذرائع ۔ طورخم بارڈر پر افغانستان سے آنے والے ہر پاکستانی اور افغانی سے مکمل معلومات لے کر رجسٹروں میں درج کر دیا جاتا ہے جس کے لئے مختلف کاؤنٹرز قائم کئے گئے ہیں طورخم کے نائب تحصیلدار شمس الاسلام نے بتایا کہ افغانوں کو راہداری کارڈز الگ جاری کئے جاتے ہیں جس کے لئے الگ شرائط ہیں جس کا رجسٹریشن سے کوئی تعلق نہیں انہوں نے کہا کہ اس سال یکم فروری سے اٹھائیس فروری تک ایک لاکھ اکیس ہزار پچانوے افراد کو طورخم بارڈر پر رجسٹرڈ کیا گیا ہے افغانستان سے طورخم کے راستے آنے والے پاکستانیوں کی تعداد چار ہزار سات سو چھیالیس ہے جبکہ افغانوں کی تعداد ایک لاکھ سولہ ہزار تین سوانچاس ہے جن کے نام والد کا نام، پاکستان اور افغانستان میں سکونت کی جگہ کا نام، کہاں سے آئے ،کہاں جا رہے ہیں اور کس مقصد کے لئے جاتے ہیں یہ تمام تر معلومات باقاعدہ رجسٹروں میں لکھ دی جاتی ہیں تاکہ کوئی امن و امان کا مسئلہ پیدا نہ کر سکے انہوں نے کہا کہ رجسٹریشن اور راہداری دونوں الگ الگ کئے جاتے ہیں اور یہ سب کچھ اعلیٰ حکام کی ہدایات کی روشنی میں کیا جاتا ہے تاکہ طورخم کے راستے کوئی سازشی عناصر یا ملک دشمن عناصر پاکستان نہ آسکے انہوں نے کہا کہ طورخم بارڈر پر سیکیورٹی اور جامہ تلاشی کا سلسلہ بھی سخت کر دیا گیا ہے اور دن رات بارڈر کی کڑی نگرانی کی جاتی ہے۔

مزید : پشاورصفحہ اول