نائجیرین ماہرین تعلیم کے گیارہ رکنی وفدکاعلامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کا دورہ

نائجیرین ماہرین تعلیم کے گیارہ رکنی وفدکاعلامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کا ...

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)نائجیریا کی سکوٹو اسٹیٹ یونیورسٹی کے گیارہ رکنی ماہرین تعلیم پر مشتمل وفد نے آج سوموار کو علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کا ایک روزہ دورہ کیا اور اوپن یونیورسٹی کے ساتھ پروفیشنل ڈیویلپمنٹ اور تحقیق کے فروغ کے لئے مفاہمت کی یاداشت (MoU)پر دستخط کئے۔مفاہمت کی یاداشت پر سکوٹو اسٹیٹ یونیورسٹی کے وائس چانسلر ٗ پروفیسر نوہو او یعقوب(Prof. Nuhu O Yaqub)نے جبکہ اوپن یونیورسٹی کی جانب سے یونیورسٹی کے وائس چانسلر ٗ پروفیسر ڈاکٹر شاہد صدیقی نے دستخط کئے۔نائجرین ماہرین تعلیم نے اوپن یونیورسٹی کی قومی خدمات کو سراہتے ہوئے کہا کہ فاصلاتی نظام تعلیم کے تحت 13۔لاکھ سے زائد طلبہ کو معیاری تعلیم فراہم کرنا بہت بڑا کام ہے۔اوپن یونیورسٹی کے وائس چانسلر ٗ پروفیسر ڈاکٹر شاہد صدیقی نے نائجرین ماہرین تعلیم کو اگلے سال سوشل سائنسسز پر مشترکہ طور پر ایک بین الاقوامی کانفرنس کے انعقاد کی پیشکش کیں جسے انہوں نے گرمجوشی سے قبول کیا۔ معاہدے کے مطابق دونوں یونیورسٹیزسائنس ٗ ٹیکنالوجی ٗ پروفیشنل ڈیولپمنٹ ٗ افرادی قوت کی تربیت اور تحقیق کے میدان میں باہمی تعاون کے لئے ایک فریم ورک تیار کریں گے۔دونوں تعلیمی ادارے علم اور تکنیک کے فروغ کے لئے تعلیمی پروگراموں کی مختلف اقسام کا باہمی تبادلہ بھی کریں گے۔مشترکہ مفادات کے شعبوں میں تحقیق کی بنیاد پر مطالعہ پر خصوصی توجہ دی جائے گی۔نائجرین ماہرین تعلیم کے وفد میں ڈپٹی وائس چانسلر ٗ پروفیسر ملامی بوبا(Prof. Malami Buba)اور رجسٹرار آمنہ جی یوسف بھی شامل تھیں۔ وفد کو یونیورسٹی کے انسٹی ٹیوٹ آف ایجوکیشنل ٹیکنالوجی ٗ ریڈیو /ٹی وی سٹوڈیوز ٗ لائبریری اور پرنٹ پروڈکشن یونٹ کا دورہ بھی کرایا گیا۔ دستخطوں کی تقریب یونیورسٹی کے کونسل ہال میں منعقد کی گئی۔ڈین فیکلٹی آف عربی و علوم اسلامیہ ٗ پروفیسر ڈاکٹرعلی اصغر چشتی ٗ یونیورسٹی کے رجسٹرار ٗ پروفیسر ڈاکٹر محمد نعیم قریشی اور شعبہ بین الاقوامی تعاون کے انچارج ٗ ڈاکٹر زاہد مجیدبھی اس موقع پر موجود تھے۔ پروفیسر ڈاکٹر شاہد صدیقی نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس معاہدے سے نہ صرف دونوں اداروں کے طلبہ مستفید ہوں گے بلکہ یہ دونوں ممالک کی یونیورسٹیوں کے مابین تعلیمی شعبے میں تعاون کو مزید مستحکم کرے گا۔نہوں نے کہا کہ پاکستان میں فاصلاتی نظام تعلیم کو امیدوں سے بڑھ کر پذیرائی مل چکی ہےٗ لوگوں کی ایک بڑی تعداد اس نظام تعلیم کو اپنے لئے بہتر ذریعہ تعلیم سمجھتے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کے طلبہ کی تعداد 13۔لاکھ سالانہ سے تجاوز کرگئی ہے۔ڈاکٹر شاہد صدیقی نے مزید کہا کہ یونیورسٹی عمومی تعلیم کے ساتھ ساتھ ملک سے بے روزگاری اور پسماندگی کے خاتمے کے لئے موثر کردار ادا کرنے کے لئے پیشہ ورانہ تعلیم و تربیت پر بھی کافی توجہ دے رہی ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر