پی ایس اوکابعد از ٹیکس منافع 19.4 ارب روپے تک پہنچ گیا

پی ایس اوکابعد از ٹیکس منافع 19.4 ارب روپے تک پہنچ گیا

کراچی(آن لائن) رواں مالی سال جولائی سے مارچ کے دوران پاکستان اسٹیٹ آئل (پی ایس او )کی سیلز دس فیصد اضافے سے10کھرب 2ارب روپے رہیں جو گذشتہ مالی سال کی اسی مدت کے دوران 930 ارب روپے تھی، کمپنی کا بعد از ٹیکس منافع 19.4 ارب روپے تک پہنچ گیاجو گزشتہ مالی سال کی اسی مدت کے دوران 9.4ارب روپے تھا۔گزشتہ روز پی ایس اوکے بورڈ آف مینجمنٹ کا اجلاس کراچی میں منعقد ہوا جس میں 31 مارچ 2014 کو ختم ہونے والے 9ماہ کی مدت کے دوران کمپنی کی کارکردگی کا جائزہ لیا گیا۔اجلاس کو بتایا گیا کہ یہ منافع 9ماہ کی اسی مدت کے دوران اب تک حاصل ہونے والے منافع میں سب سے زیادہ ہے اور پورے مالی سال 2013 کا بعد از ٹیکس منافع جو 12.6 ارب روپے تھا سے 54 فیصد زیادہ ہے۔پی ایس او نے بلیک آئل میں 73 فیصد اور وائٹ آئل میں 53 فیصد شیئر کے ساتھ مارکیٹ میں اپنی قیادت برقرار رکھی، کمپنی کی لیکوڈ فیول سیلز میں گزشتہ مالی سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 4 فیصد اضافہ ہوا، مالی سال 2014 کی پہلی ششماہی کے دوران امریکی ڈالر کے مقابلے میں پاکستانی کرنسی کی 6.5 فیصد ڈی ویلیویشن ہوئی جبکہ اس کے بعد تیسری سہ ماہی میں 7 فیصد بحالی ہوئی مگر جس کے نتیجے میں زیر بحث مدت کے دوران 1.2بلین روپے کا ایکس چینج کا خسارہ ہوا، پاور سیکٹر پروڈیوسرز سے انٹرسٹ کی وصولی اور پی آئی بی سے وصول ہونے والے انٹرسٹ نے باٹم لائن پر مثبت کنٹری بیوشن کیا تاہم اس سے مالی لاگت میں 23 فیصد اضافہ ہوا۔

٭٭٭٭٭

مزید : کامرس