معیشت کی ترقی میںمزدورں کا کردار فراموش نہیں کیا جا سکتا،عبدالوہاب روپڑی

معیشت کی ترقی میںمزدورں کا کردار فراموش نہیں کیا جا سکتا،عبدالوہاب روپڑی

لاہور(پ ر)مزدور اور کارکن ہماری ملکی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں مزدور ہی ترقی و طاقت کا حقیقی سرچشمہ ہیں جسے حکومت زراعت و صنعت کے شعبوں میں بنیادی اصلاحات لا رہی ہے پاکستانی معیشت کے فروغ کے لیے مزدور کے اہم کردار کو فراموش نہیں کیا جا سکتا ان خیالات کا اظہار جماعت اہلحدیث پاکستان کے رہنما حافظ عبدالوہاب روپڑی، مولانا شکیل الرحمن ناصر، حافظ عبدالوہاب روپڑی، مولانا شاہد محمود جانباز، مولانا سلمان عادل سمیت دیگر قائدین نے گذشتہ روز جامعہ دارالقدس چوک دالگراں لاہور میں انجمن تاجران کے وفد سے ملاقات کے دوران کیا انہوں نے کہا کہ پاکستان میں مزدوروں کے حالات انتہائی دگرگوں ہیں دیگر ملکوں کی طرح پاکستان میں بھی ہر سال یکم مئی ”مزدوروں کے عالمی دن “کی حیثیت سے منایا جاتا ہے مگر ہماری قوم کی بدقسمتی یہ ہے کہ ”یوم مزدور کے عالمی دن “ پر افسران گھر بیٹھے چھٹی کا مزہ لوٹ رہے ہوتے ہیں جبکہ محنت کش اور مزدور اپنے بال بچوں کا پیٹ پالنے کی خاطر اپنے کام میں مصروف ہوتا ہے شکیل الرحمن ناصر نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ملک کی اکثریتی صنعتیں اور کارخانے بند ہونے اور فیکٹریوں میں مزدوروں کے لیے روزگار کے مواقع بہت کم میسر ہونے کے باعث مزدوروں کے گھروں کے چولہے ٹھنڈے پڑ چکے ہیں اس پر کمر توڑ مہنگائی نے غریبوں سے دو وقت کی روٹی بھی چھین لی ہے حکمرانوں کے وعدوں کے باوجود محنت کش اور مزدور طبقہ غربت افلاس کی وجہ سے خود کشیوں پر مجبور ہے پیپلز پارٹی پچھلے پانچ برسوں تک ملک میں برسر اقتدار رہی مگر حسب روایت ان برسوں میں بھی اس نے کسانوں اور محنت کشوں کی نمائندہ جماعت ہونے کا دعویدار ہونے کے باوجود ان کی فلاح و بہبود اور خوشحالی کے لیے کوئی خاطر خواہ اقدامات نہیں اٹھائے بھاری اکثریت سے منتخب ہونے والی موجودہ حکومت سے عوام بہت ساری اُمیدیں لگائے بیٹھے ہیں۔

انہوں نے حکومتی عہدیداران سے مطالبہ کیا کہ وہ پاکستانی معیشت کی بہتری کے لیے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات اٹھائیں اور خصوصی طور پر چائلڈ لیبر پر مکمل پابندی لگا کر قوم کے سپوتوں کے ہاتھوں میں کتابیں اور قلم پکڑا کر ان کا اور ملک کا مستقبل روشن کرنے میں اپنا کردار ادا کریں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1