جماعت اسلامی کی بسوں میں قابل اعتراض فلمیں دکھانے کے خلاف قرارداد اسمبلی میں جمع

جماعت اسلامی کی بسوں میں قابل اعتراض فلمیں دکھانے کے خلاف قرارداد اسمبلی ...

 لاہور(پ ر)پارلیمانی لیڈر اور امیر جماعت اسلامی پنجاب ڈاکٹر سید وسیم اختر نے نجی کمپنیوں کی بسوں میںانتہائی بے ہودہ،لغو اور فحش انڈین فلمیں دکھانے کے حوالے سے قرارداد پنجاب اسمبلی کے سیکرٹریٹ میں جمع کروادی قرارداد میں کہاگیا ہے کہ ”بین الاضلاعی سفر کے دوران نجی کمپنیوں کی بسوں میں انتہائی بے ہودہ،لغو اور فحش انڈین فلمیں اور میوزک دکھایاجاتا ہے،جس سے سارے ہی مسافر بالعموم جبکہ فیملیز بالخصوص سخت اذیت،پریشانی اور مشکل سے گزرتے ہیںکوئی توجہ دلائے تو اس کویہ کہہ کر چپ کرادیا جاتاہے کہ آپ دوسری بس میں بیٹھ جائیںہم یہ سب بند نہیں کرسکتے حکومت پنجاب اس اہم مسئلے پر توجہ دے اور مناسب اقدامات کرکے اس بات کا اہتمام کرے اور مسافر وںکو اس کوفت اور اذیت سے بچائے“علاوہ ازیںڈاکٹر سید وسیم اختر نے میڈیا کو جاری کردہ بیان میں کہاکہ معاشرے میں بڑھتی ہوئی عریانی وفحاشی کااصل سبب انڈین فلمیں اور گانے ہیںجو ہماری نوجوان نسل کو دین اسلام سے دورکرنے کاکردار اداکررہی ہیںجب تک ہم اللہ اور اس کے رسول کی پیروی نہیںکرتے ہم دنیا اور آخرت میں فلاح نہیں پا سکتے سوچی سمجھی سازش کے تحت ہماری نوجوان نسل کو تفریح کے نام پر تباہ وبرباد کیاجارہاہے۔           

مزید : میٹروپولیٹن 1