حکومت مزدوروں میں دوران کام صحت کا شعور بیدار کررہی ہے،مجتبیٰ شجاع

حکومت مزدوروں میں دوران کام صحت کا شعور بیدار کررہی ہے،مجتبیٰ شجاع

لاہور(جنرل رپورٹر) وزیرایکسائز و ٹیکسیشن ، خزانہ پنجاب مجتبی شجاع الرحمن نے کہاہے کہ پنجاب حکومت مزدوروں میں کام کے دوران حفاظت اور صحت کے احساس کے بارے میں آگاہی دینے کی ہر ممکن کوشش کر رہی ہے جس میں صنعتوں کو تکنیکی سہولتوں کی فراہمی بھی شامل ہے انہوں نے کہا کہ محنت کشوں کو علاج معالجہ کی بہتر سہولیات کی فراہمی پر اربوںروپے خرچ کئے جارہے ہیں اورمحنت کشوں کے بارہ ہزار بچوں کو تعلیمی وظائف فراہم کئے جا رہے ہیں اور ساڑھے چھ ارب روپے کے فنڈ ز سے محنت و مزدوروں کے لئے 2 ہزار فلیٹس صوبہ کے چار شہروں میں تعمیر کئے جا رہے ہیں انہوں نے کہا کہ نئے صنعتی شہروں /انڈسٹریل اسٹیٹس کے لئے پانچ ارب روپے کے فنڈز فراہم کئے گئے اپنی رہائش گاہ پر مزدوروں کے مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے مجتبی شجاع الرحمن نے کہا کہ حکومت پنجاب معیاری صحت کی سہولتوں پر 102ارب روپے جبکہ ملینیم ڈویلپمنٹ گولز کے حصول کے لیے ساڑھے 3 ارب روپے خرچ کئے جارہے ہیں مجتبیٰ شجاع الرحمن نے کہا کہ ILO کے مطابق ہر سال کام کی جگہوں پر 270 ملین حادثات ہوتے ہیں جن میں سے 355,000 جان لیوا ہوتے ہیں ترقی پذیر ملکوں میں مرنے والوں کی تعداد صنعتی اقوام کے مقابلے میں 5 سے 7 گنا زیادہ ہے انہوںنے بتایا کہ ILO اور یوپین یونین نے بچوں کو خطرناک مشقت سے بچانے کے لئے ایک بڑے منصوبے کا آغاز کیا ہے جس کے ذریعے 14 تا 17 سال کی عمر کے نو بالغ افراد کو کام کی وجہ سے لاحق ہونے والی بیماریوں اور حادثات سے محفوظ کیا جا ئے گا انہوںنے کہاکہ حکومت نے عالمی ادارہ محنت کے کنونشنز 182 اور 138 پر دستخط کئے ہیں اور ہمیں قوانین کو ان کنونشنز کے مطابق بنانا ہو گاجبکہ صوبہ پنجاب میں چائلڈ لیبر کے خاتمے کی کوششوں میں سب سے آگے ہے انہوںنے کہا کہ ہزاروں بھٹہ مزدور بچوںکو لاہور اور قصور کے اضلاع میں سکول کی تعلیم کے لئے رجسٹر کیا گیا،کروڑوںروپے اینٹوں کے بھٹوں پر کام کرنے والے مزدووں کو بلا سود قرضے فراہم کئے گئے

اور مزدوروں کے شناختی کارڈ حاصل کئے گئے ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1