وزیر اعظم نواز شریف کے خلاف توہین عدالت کی درخواست مسترد

وزیر اعظم نواز شریف کے خلاف توہین عدالت کی درخواست مسترد

لاہور(نامہ نگار خصوصی ) چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ نے کالا باغ ڈیم سے متعلق عدالتی فیصلے پر عمل نہ کرنے پر وزیر اعظم نواز شریف کے خلاف توہین عدالت کی درخواست پررجسٹرار آفس کا اعتراض برقرار رکھتے ہوئے یہ درخواست مسترد کر دی۔رجسٹرار آفس نے سندھ واٹر کونسل کی طرف سے وزیر اعظم کیخلاف توہین عدالت کی درخواست پر اعتراض لگایا تھا کہ وزیر اعظم کو آئین کے آرٹیکل248 کے تحت استثنیٰ حاصل ہے، ان کیخلاف توہین عدالت کی درخواست دائر نہیں کی جا سکتی، گزشتہ روزچیف جسٹس مسٹر جسٹس عمر عطا ءبندیال نے درخواست کی بطور اعتراض کیس سماعت کی، چیف جسٹس نے اعتراض برقرار رکھتے ہوئے قرار دیا کہ عدالت نے وزیر اعظم کو کالا باغ ڈیم کی تعمیر سے متعلق براہ راست حکم جاری نہیں کیا تھا اس لئے وزیر اعظم توہین عدالت کے مرتکب نہیں بنتے،سندھ واٹر کونسل کی درخواست پر ہائیکورٹ نے حکم دیا تھا کہ کالا باغ ڈیم کی تعمیر سے متعلق عدالتی فیصلہ مشترکہ مفادات کونسل کے اجلاس میں پیش کیا جائے اور ڈیم کی تعمیر کیلئے کونسل کی سفارشات پر عمل کیا جائے۔ مشترکہ مفادات کونسل کے چیئرمین کا عہدہ وزیر اعظم کے پاس ہوتا ہے۔توہین عدالت کی درخواست میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ وزیر اعظم نے عدالتی حکم کے باوجود کالا باغ کی تعمیر کے لئے کوئی اقدام نہیں کیا ۔

درخواست مسترد

مزید : صفحہ آخر