لیسکو نے متعدد نا دہندہ سرکاری اداروں اور محکموں کے بجلی کنکشن کاٹ دیئے

لیسکو نے متعدد نا دہندہ سرکاری اداروں اور محکموں کے بجلی کنکشن کاٹ دیئے
 لاہور(کامرس رپورٹر)لیسکو نے نادہندہ سرکاری محکموں اوراداروں کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے متعدد سرکاری اداروں اورمحکموں کے بجلی کنکشن کاٹ دیئے۔ چیف ایگزیکٹولیسکوارشدرفیق کی ہدایت پرگزشتہ روز(30 اپریل)تک بجلی کے بلوں کے نادہندہ سرکاری محکموں کیخلاف کارروائی کی گئی، لیسکوناردرن سرکل میں چیف انجینئر ایل ڈی اے،یوڈی وِنگ،پولیس سٹیشن نواں کوٹ لاہور،،اے ڈی او،ڈسٹرکٹ آفیسر پیسنجر اینڈ فرائیٹ، جی ایم پنجاب نارتھ، ایجوکیشن، ریلوے، ایریگیشن اینڈ پاور ڈیپارٹمنٹ، آرکیالوجی، واسا، پنجاب پولیس، پرنسپل کالج آف ویٹرنری اے سی اولڈ ہاؤس لاہور، ایس ایس پی آفس کچہری روڈ لاہور، ای ڈی او(ریوینیو) لاہور،ڈسٹرکٹ ناظم سٹی گورنمنٹ لاہور،پرنسپل گورنمنٹ کالج لائبریری ہال لاہور،پرنسپل گورنمنٹ کالج اے سی کالج لائیٹ لاہور،سپرنٹنڈنٹ شاہی قلعہ اولڈفورٹ لاہور،آفس سپرنٹنڈنٹ آثارِ قدیمہ شاہی قلعہ لاہور،ایس ڈی او پبلک ہیلتھ شاہی قلعہ لاہور،سپرنٹنڈنٹ آرکیالوجی میوزیم فورٹ لاہور،اسسٹنٹ ڈائریکٹرواٹرلاہورفورٹ اور ڈی ڈی(ای ایم ای)پی ایچ اے فورٹ روڈلاہورشامل ہیں، ان محکموں کے ذمے لاکھوں روپے کے واجبات تھے جن کے بجلی کنکشن منقطع کر دیئے گئے ہیں، لیسکو کے ساؤتھ سرکل میں ایکسئین ایریگیشن،پنجاب ہائی وے،جبکہ ایسٹرن سرکل میں ایکسئین رنگ روڈ،پی ایچ اے،آرکیالوجی،ٹی ایم اے شالامار،ڈسٹرکٹ گورنمنٹ ہیلتھ،ٹی ایم او، واہگہ ٹاؤن اور لیسکوقصور سرکل میں پولیس سٹیشن صدر،تحصیلدارآفس،ریسٹ ہاؤس،ڈسٹرکٹ کونسل ہال، لوکل گورنمنٹ،ایکسئین ہائی وے،اینوائرمنٹ،ہیلتھ سنٹر،قصورگارڈن،ای ڈی او، فنانس،واٹرسپلائی نظام پورہ،رانامحمدادریس ڈسپوزل پتوکی، ٹی ایم اے چونیاں اہلووال،آفس کینال چونیاں روڈ،پبلک ہیلتھ سنٹر واں ادہن،واٹرسپلائی پورہ،ایکسئین پبلک ہیلتھ چھانگامانگا،چےئرمین یونین کونسل چک31،واٹرسپلائی چک32-33،واٹرسپلائی سکیم الٰہ آباد،ایس ایچ اوانچارج کورے سیال،چےئرمین یونین کونسل،ریلوے سٹیشن کنگن پور،اسسٹنٹ ڈائریکٹرفشری کوٹ جان محمد،رورل واٹرسپلائی سرائے مغل،واٹرڈسپوزل شیرپورروڈپھول نگر،سیوریج سکیم جھمبرکلاں،پبلک ہیلتھ پتوکی،پاکستان ریلوے پتوکی،چےئرمین ٹاؤن کمیٹی کوٹ رادھاکشن،واٹرڈسپوزل،کوٹ رادھاکشن،گرلزسکول اور راجہ جنگ کے سرکاری محکموں کے بجلی کنکشن مجموعی طور پر کروڑوں روپے کی نادہندگی کے باعث منقطع کر دیئے گئے ہیں۔

مزید : صفحہ اول