ملک بھر میں مزدوروں کا عالمی دن جوش و جذبے سے منایا جارہا ہے

ملک بھر میں مزدوروں کا عالمی دن جوش و جذبے سے منایا جارہا ہے
ملک بھر میں مزدوروں کا عالمی دن جوش و جذبے سے منایا جارہا ہے

  

 لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)یکم مئی مزدوروں کے عالمی دن کے طور پر منایا جارہا ہے۔ اس دن کو منانے کا مقصد امریکہ کے شہر شکاگو کے محنت کشوں کی جدوجہد کویاد کرنا ہے۔یوم مئی کا آغاز 1886ءمیں محنت کشوں کی طرف سے آٹھ گھنٹے کے اوقات کار کے مطالبے سے ہوا۔ اس دن امریکا کے محنت کشوں نے مکمل ہڑتال کی۔ تین مئی کو اس سلسلے میں شکاگو میں منعقد مزدوروں کے احتجاجی جلسے پر حملہ ہوا جس میں 4 مزدور ہلاک ہوئے۔ اس بربریت اور ظلم کے خلاف محنت کش احتجاجی مظاہرے کے لئے جمع ہوئے تو پولیس نے مظاہرہ روکنے کے لئے محنت کشوں پر تشدد کیا، اسی دوران بم دھماکے میں ایک پولیس افسر ہلاک ہوا تو پولیس نے مظاہرین پر گولیوں کی بوچھاڑ کر دی جس کے نتیجے میں بے شمار مزدور ہلاک ہوئے اور درجنوں کی تعداد میں زخمی ہو گئے۔ اس موقع پر سرمایہ داروں نے مزدور رہنماو¿ں کو گرفتار کر کے پھانسیاں دیں حالانکہ ان کے خلاف کوئی ثبوت نہیں تھا کہ وہ اس واقعے میں ملوث ہیں۔ انہوں نے مزدور تحریک کے لیے شہادت دے کر سرمایہ دارانہ نظام کا انصاف اور بربریت واضح کر دی۔ ان رہنماو¿ں نے کہا تھا کہ ’تم ہمیں جسمانی طور پر ختم کر سکتے ہو لیکن ہماری آواز نہیں دبا سکتے‘۔ اس جدوجہد کے نتیجے میں دنیا بھر میں محنت کشوں نے آٹھ گھنٹے کے اوقات کار حاصل کئے۔ آج پاکستان بھر میں یکم مئی کے حوالے سے مختلف سیاسی، سماجی، مذہبی اور مزدور تنظیموں کے تحت ریلیاں، ورکشاپ، سیمینارز اور جلسے منعقد کئے جائیں گے جس سے مزدور تنظیموں کے رہنما خطاب کریں گے۔

مزید : قومی /اہم خبریں