کارکنوں کی ہلاکت، کل یوم سوگ منانے کا اعلان، معاملات ہمارے ہاتھ سے نکلے تو ذمہ دار نہ ہوں گے: رابطہ کمیٹی

کارکنوں کی ہلاکت، کل یوم سوگ منانے کا اعلان، معاملات ہمارے ہاتھ سے نکلے تو ...
کارکنوں کی ہلاکت، کل یوم سوگ منانے کا اعلان، معاملات ہمارے ہاتھ سے نکلے تو ذمہ دار نہ ہوں گے: رابطہ کمیٹی

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ قومی موومنٹ نے کارکنوں کی ہلاکت کے خلاف کل یوم سوگ منانے کا اعلان کر دیا ہے، ایم کیو ایم کے رہنماءخالد مقبول صدیقی کا کہنا ہے کہ ایم کیو ایم سمیت پوری قوم کے کیلئے صدمے کی گھڑی ہے، کل کا سوگ مکمل طور پر پرامن ہو گا۔ ایم کیو ایم کی رابطہ کمیٹی نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تمام کوششوں کے باوجود ہمارے ایسے گرفتار ہونے والے ساتھی جن کی گرفتاری کو ظاہر نہیں کیا گیا ان کی لاشیں تسلسل کے ساتھ ہمیں ملتی رہیں اور آج ہمیں اپنی چار عزیز ساتھی جو ایم کیو ایم کے نوجوان کارکن تھے اور چار گھروں کے چراغ تھے، ہمیں مسخ شدہ لاشوں کی صورت میں ملے ہیں، ہم یہاں کے انصاف سے مایوس ہو خدا سے انصاف طلب کر رہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ چند روز قبل ہمارے 9 ساتھیوں کو گرفتار کیا گیا تھا جن میں سے 2ساتھی اب بھی لاپتہ ہیں اور ان کی زندگی کے بارے تشویش ہے، ہم ان کارکنان کی بازیابی کا مطالبہ کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پورا شہر اس سوگ میں سوگوار ہے اور لوگوں نے رضاکارانہ طور پر ہی اپنی دکانیں بند کرنی شروع کی ہیں، اس شہر کے بیٹے مارے جا رہے ہیں اور شہر کے نوجوان بیٹوں کی اس افسوناک شہادت پر سوگوار ہیں۔ ان شہادتوں،ظلم و بربریت اور قانون کی دھجیاں بکھیرنے کے خلاف کل پورا سندھ پرامن احتجاج کرے گااور میں ایم کیو ایم کی جانب سے تمام لوگوں سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ اپنے جذبات کو قابو میں رکھیں اور کسی طرح سے بھی مشتعل نہ ہوں ہماری پوری کوشش ہے کہ کل کا سوگ مکمل طور پر پرامن ہو گا۔ خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ کارکنوں کی گرفتاریوں کے خلاف عدالتوں میں بھی گئے لیکن نہ ہمارے ساتھیوں کو تحفظ ملا اور نہ ہی انصاف ملا۔ ایم کیو ایم نے یوم سوگ منانے کیلئے ایمنسٹی انٹرنیشنل کے خلاف کل پریس کلب کے باہر احتجاج بھی ملتوی کر دیا ہے۔ آل کراچی تاجر اتحاد نے یوم سوگ کے سلسلے میں تمام مارکیٹیں بند کرنے جبکہ پرائیویٹ سکول ایسوسی ایشن کے چیئرمین نے کل تمام نجی سکول بند کرنے کا اعلان بھی کر دیا ہے۔ کراچی بورڈ کے تحت جمعہ کو ہونے والے میٹرک کے پریکٹیکل بھی ملتوی کر دیئے گئے ہیں۔ دوسری جانب آئی جی سندھ اقبال محمود نے ایم کیو ایم کے کارکنوں کے قتل کا نوٹس لیتے ہوئے ایڈیشنل آئی جی شاہد حیات کو واقعہ کی تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔

مزید : کراچی /اہم خبریں