شریعت کی بالادستی کی جنگ لڑ رہے ہیں،پیچھے نہیں ہٹیں گے:تحریک طالبان

شریعت کی بالادستی کی جنگ لڑ رہے ہیں،پیچھے نہیں ہٹیں گے:تحریک طالبان
شریعت کی بالادستی کی جنگ لڑ رہے ہیں،پیچھے نہیں ہٹیں گے:تحریک طالبان

  

وزیرستان(مانیٹرنگ ڈیسک )کالعدم تحریک طالبان کے ترجمان شاہداللہ شاہدنے کہاہے کہ ہم شریعت کی بالادستی کی جنگ لڑ رہے ہیں مذاکرات ہوں یا جنگ کسی صورت اپنے مقصد سے پیچھے نہیں ہٹیں گے۔ تحریک طالبان کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہاگیا ہے کہ ہم نے حکومت کوجنگ بندی کا تحفہ دیا لیکن ملک بھرمیں ہمارے ساتھیوں کے خلاف فورسزکی کارروائیاں جاری رہیں۔خصوصاًگزشتہ دوروزسے ان کارروائیوں میں تیزی آئی ہے ۔انہوں نے حکومت سے سوال کیا کہ کیا جنگ اورمذاکرات ایک ساتھ چل سکتے ہیں۔شاہد اللہ شاہد نے کہا کہ کیا مذاکراتی عمل کا سبب بننا اور مذکرات میں پیشرفت صرف طالبان کی ذمہ داری ہے ۔مذاکرات کوجنگی سیاسی ہتھیار کے طورپرکبھی قبول نہیں کریں گے۔حکومت مذاکرات کے ساتھ جنگ اور دھمکی کی سیاست پرعمل پیرا ہے۔ترجمان تحریک طالبان نے کہاکہ مذاکرات میں حکومت کی سنجیدگی اور خودمختاری نظرنہیں آرہی ہمیں تو یہ تعین کرنابھی مشکل ہے کہ مذاکرات کس سے کریں۔انہوں نے واضح کیاکہ تحریک طالبان سنجیدہ اوربامقصدمذاکرات سے پیچھے نہیں ہٹے گی لیکن حکومت کی طرف سے مذاکرات میں پیش رفت ہوئی اورنہ ہی فورسز کی کارراوئیاں روکی گئیں۔

مزید : وزیرستان /اہم خبریں