ایک اور امریکی استانی نے سر شرم سے جھکا دیا

ایک اور امریکی استانی نے سر شرم سے جھکا دیا
ایک اور امریکی استانی نے سر شرم سے جھکا دیا

  

نیویارک(بیورورپورٹ)امریکی نظام تعلیم کی خرابیاں آہستہ آہستہ ظاہر ہونا شروع ہوگئی ہیں۔حالیہ کچھ عرصے میں استانیوں کا اپنے نوعمر طالب علموں سے جنسی تعلقات بنانے کی خواہش نے امریکی تعلیمی نظام کی جڑیں کمزور کرنا شروع کر دی ہیں۔ گزشتہ روز بھی امریکی ریاست ڈیلاور کی مڈل سکول کی استانی ”سٹیفنی سی بری“کی اپنے نوعمر طالب علم سے ”عشق“ لڑانے کی کہانی منظر عام پر آگئی۔استانی کی عمر 22سال ہے اور وہ اپنے سے 9سال چھوٹے طالب علم جو کہ صرف 13سال کا ہے سے جنسی تعلقات استوار کرکے عشق لڑاتی رہی۔بچے کے والدین کاکہنا ہے کہ انہیں اپنے بیٹے کی حرکات پر شک گزرا جس کے جواب میں انہو ں نے بچے پر نظر رکھتے ہوئے اس تمام عمل کا پتالگایا۔پولیس نے سٹیفنی کو گرفتار کر لیاہے اوراس پر الزام عائدکیاگیاہے کہ وہ ایک معصوم بچے کے ساتھ غلط سلوک کر تی رہی ہے۔جبکہ سکول انتظامیہ نے سٹیفنی کوسکول سے نکال دیا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس