دبئی کی سڑک پر نیم برہنہ حالت میں بھاگتی غیرملکی لڑکی، بالآخر لوگوں نے روک کر پوچھا تو ایسی شرمناک ترین وجہ بتادی کہ ہر کوئی ہل کر رہ گیا

دبئی کی سڑک پر نیم برہنہ حالت میں بھاگتی غیرملکی لڑکی، بالآخر لوگوں نے روک کر ...
دبئی کی سڑک پر نیم برہنہ حالت میں بھاگتی غیرملکی لڑکی، بالآخر لوگوں نے روک کر پوچھا تو ایسی شرمناک ترین وجہ بتادی کہ ہر کوئی ہل کر رہ گیا

  

دبئی سٹی (مانیٹرنگ ڈیسک) عرب ممالک میں کام کرنے والے غیر ملکیوں کے ساتھ کفیلوں کی بدسلوکی کوئی نئی بات نہیں ہے لیکن متحدہ عرب امارات میں ایک کفیل نے اپنی غیرملکی گھریلو ملازمہ کے ساتھ ایسی درندگی کر ڈالی کہ بیچاری چیختی چلاتی سڑک پر بھاگ نکلی۔

گلف نیوز کی رپورٹ کے مطابق ایتھوپیا سے تعلق رکھنے والی 21 سالہ ملازمہ کو لوگوں نے روتے چلاتے سڑک پر بھاگتے دیکھا تو اسے روک کر پوچھا کہ اس کے ساتھ کیا ہوا تھا۔ بیچاری ملازمہ کی حالت غیر ہورہی تھی اور وہ چیخ چیخ کر کہہ رہی تھی کہ اس کے کفیل نے اس کا یہ حال کیا ہے۔

مسجد الحرام کے باہر نوجوان نے سڑک پر کھڑی خاتون کو تھپڑ دے مارا، یہ کون تھی اور پھر اس کے ساتھ کیا ہوا؟ جان کر آپ کی بھی آنکھیں نم ہوجائیں گی

لڑکی کی تشویشناک حالت دیکھ کر پولیس کو اطلاع کر دی گئی۔ تفتیش کے دوران اس نے بتایا کہ سہ پہر چار بجے کے قریب کفیل نے اسے فوراً اپنے کمرے میں آنے کو کہا۔ لڑکی کا کہنا تھا کہ جب وہ کمرے میں گئی تو کفیل نے دروازے کو اندر سے بند کرلیا اور اسے جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے لگا۔ بے رحم کفیل نے اس کی آہ و فریاد پر بھی ترس نہ کھایا اور اسے بدترین جنسی تشدد کا نشانہ بنایا۔

لڑکی کی درخواست پر اس کے کفیل کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا اور واقعے کی مکمل تحقیقات کی گئیں۔ عدالت میں کفیل کے خلاف تمام متعلقہ شواہد پیش کئے گئے، جن کی روشنی میں اسے جنسی زیادتی اور تشدد کا مجرم قرار دیا گیا۔ عدالت نے اسے پانچ سال قید کی سزا سنائی ہے، جس کے خلاف 15 دن کے دوران اپیل کا حق دیا گیا ہے۔

مزید :

عرب دنیا -