نامور عالم دین ، دارالعلوم اسلامیہ کے مہتمم مولانا مشرف علیتھانوی مدینہ منورہ میں انتقال کر گئے

نامور عالم دین ، دارالعلوم اسلامیہ کے مہتمم مولانا مشرف علیتھانوی مدینہ ...

لاہور (خصوصی رپورٹ ) ملک کے نامور عالم دین اور دارالعلوم اسلامیہ کامران بلاک علامہ اقبال ٹاؤن لاہورکے مہتمم مولانا مشرف علی تھانوی مدینہ منورہ میں اچانک حرکت قلب بند ہونے سے 80سال کی عمر میں انتقال کرگئے،ان کی عمر 80سال تھی۔ مرحوم انتہائی متقی پرہیزگار اور نیک سیرت انسان تھے۔ انہوں نے جامعہ اشرفیہ لاہور سے دینی تعلیم حاصل کی،انہوں نے کم و بیش پینتیس برس جامعہ دارالعلوم اسلامیہ میں بخاری شریف کا درس دیا۔ وہ برصغیر پاک و ہند کی نامور علمی و اصلاحی شخصیت حکیم الامت حضرت مولانا اشرف علی تھانوی ؒ کے نواسے، مفتی جمیل احمد تھانوی کے بڑے بیٹے ، ڈاکٹر عبدالحیی عارفی کے خلیفہ مجاز اور مولانا ادریس کاندھلوی صاحب کے داماد ،معروف قاری مولانا قاری احمد میاں تھانوی، مولانا خلیل احمد تھانوی اور مولانا محمد میاں تھانوی کے بڑے بھائی تھے۔ انہوں نے 2بیٹے، 9 بیٹیاں اور اہلیہ سمیت ہزاروں شاگرد اور لاکھوں عقیدت مند سوگوار چھوڑے ہیں، مرحوم کو ان کی وصیت کے مطابق جنت البقیع مدینہ منورہ میں دفن کیا جائے گا۔ مولانا مشرف علی تھانوی کی وفات پر جامعہ اشرفیہ لاہور کے مہتمم مولانا حافظ فضل الرحیم اشرفی، نائب مہتمم مولانا قاری ارشد عبید، حافظ اسعد عبید، حافظ اجود عبید، مولانا زبیر حسن، حافظ خالد حسن، مولانا محمد اکرم کاشمیری، پروفیسر مولانا محمد یوسف خان، مولانا سید فہیم الحسن تھانوی اور مولانا مجیب الرحمن انقلابی نے اظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم علم و عمل کے پیکر اور اکابرین اسلاف کی جیتی جاگتی تصویر اور خانقاہ سلسلہ اشرفیہ کے روشن چراغ تھے، مرحوم کی تمام زندگی دین اسلام کی اشاعت اور تحریر و تصنیف میں گزری۔ انہوں نے مرحوم کے لئے جنت الفردوس میں اعلی مقام اور لواحقین کیلئے صبر جمیل کی دعا کی۔

مولانا مشرف علی تھانوی/انتقال

مزید : صفحہ اول


loading...