ہڑتال ختم،میڈیکل سٹورز کھل گئے،کئی علاقوں میں بدستور شٹر ڈاؤن

ہڑتال ختم،میڈیکل سٹورز کھل گئے،کئی علاقوں میں بدستور شٹر ڈاؤن

ملتان،وہاڑی،میلسی،کبیروالا ،عبدالحکیم،ٹھٹھہ صادق آباد،شاہ جمال،کوٹ ادو،بہاولپور،ترنڈہ محمد پناہ،چنی گوٹھ(جنرل رپورٹر،نمائندگان)ملتان سمیت کئی شہروں میں کیمسٹوں اور ڈسٹری (بقیہ نمبر43صفحہ12پر )

بیوٹرز ے ہڑتال ختم کردی جسکے بعد میڈیکل سٹورز کھل گئے جبکہ کئی شہروں میں 5ویں روز بھی ہڑتال جاری رہی تفصیل کے مطابق کیمسٹ ریٹیلرز ایسوسی ایشن کی جانب سے ہڑتال ختم کر دی گئی ہے جس کے بعد ملتان شہر اور گردونواح میں میڈیکل سٹور کھل گئے ہیں۔ ہول سیل کیمسٹ کونسل بدستور ہڑتال پرہے جس کے باعث ہول سیل میڈیسن مارکیٹ گھنٹہ گھر مکمل بند رہی۔گزشتہ روز ملتان شہر اور گردونواح میں میڈیکل سٹور کھل گئے ہیں۔ نشتر روڈ، چونگی نمبر9،ممتاز ا?باد،گلگشت،چونگی نمبر6،ایم ڈی ایچوک،پل براراں،ڈبل پھاٹک،نواں شہر، چونگی نمبر1 سمیت مختلف علاقوں میں مالکان نے میڈیکل سٹور کھول لئے۔کیمسٹ ریٹیلرز ایسوسی ایشن کے صدر جاوید حنیف نے میڈیا سے بات چیت کرتے کہا کہ ان کے مطالبات ہیلے ہی روز مان لئے گئے تھے۔ہول سیل کیمسٹ کونسل کی قیادت کے باہمی اختلافات نے ریٹیلرز ایسوسی ایشن کے کاز کو نقصان پہنچایا۔اب ملتان شہر میں باہمی مشاورت کے بعد ہڑتال ختم کر دی گئی ہے جس کے بعد شہر اور گردونواح میں میڈیکل سٹور کھل گئے ہیں۔دوسری جانب ہول سیل کیمسٹ کونسل بدستور ہڑتال پرہے جس کے باعث ہول سیل میڈیسن مارکیٹ گھنٹہ گھر پانچویں روز بھی مکمل بند رہی۔وہاڑی سے بیورو رپورٹ،نمائندہ خصوصی کے مطابق کیمسٹ اینڈڈرگسٹ ایسوسی ایشن کی پانچویں روز ہڑتال کے باعث میڈیکل سٹوربندرہنے کی وجہ سے سرکاری ہسپتالوں میں مریضوں کابے تحاشہ اضافہ ہوچکاہے سرکاری ہسپتالوں سے ملنے والی میڈیسن کوہی مریضوں نے غنیمت سمجھ لیاجوادویات ہسپتال سے نہیں مل سکتیں ان کے حصول کیلئے مریض اوران کے لواحقین مارے مارے پھررہے ہیں لیکن کہیں سے بھی ادویات میسرنہ ہونے پرحکومت اورمیڈیکل سٹورمالکان کے خلاف ردعمل آنے لگا۔پنجاب حکومت کی طرف سے کیمسٹ اینڈڈرگسٹ ترمیمی قوانین2017کے خلاف مکمل شٹرڈاؤن ہڑتال وجہ سے مریضوں کی مشکلات میں آئے روزشدیداضافہ دیکھنے میں آرہاہے ۔میلسی سے سپیشل رپورٹر کے مطابق میلسی شہر اور اس کے گردونواح میں بھی کیمسٹ اینڈ ڈرگ ایسوسی ایشن نے مکمل ہڑتال کی جس کی وجہ سے مریضوں کے لواحقین میڈیسن کے حصول کے لئے شدید گرمی میں سارا دن در بدر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور مگر انہیں ادویات دستیاب نہ ہوسکیں ۔کبیروالا سے نامہ نگار کے مطابق کبیروالا اور ملحقہ علاقوں میں میڈیکل اسٹورز کی ہڑتیا ل پانچویں روز بھی جاری رہی آج بھی تمام علاقوں میں میڈیکل اسٹور مکمل طور بندرہے جب کہ لاج کےء لئے ادویات کے ھصول کے لئے عوام ہاتھوں نسخے اٹھائے بازاروں میں میڈیکل اسٹوروں کے طواف کرتے بے بسی کی تصویر بنے نظر آئے ۔عبدالحکیم سے نمائندہ خصوصی ،سپیشل رپورٹرکے مطابق عبدالحکیم اور علاقہ میں کیمسٹوں اور ڈسٹری بیوٹروں کی ہڑتال ختم ،عبدالحکیم اور علاقہ میں کیمسٹوں نے ہڑتال ختم کردی ہے ، ڈسٹری بیوٹروں اور کیمسٹوں کی ہڑ تال کی وجہ سے مریضوں کو پریشانی کا سامنا رہا۔ٹھٹھہ صادق آباد سے نمائندہ پاکستان کے مطابق کیمسٹ اینڈ ڈرگسٹ ایسوسی ایشن پنجاب کی کال پر پنجاب بھر کی طرح ٹھٹھہ صادق آبادپل 14،علی شیر واہن،پل پنجو،پل 132دس آر سمیت نواح میں بھی میڈیکل سٹور ایسوسی ایشن کی طرف سے پانچ روز سے مسلسل ہڑتال کرتے ہوئے میڈیکل سٹور بند رکھے گئے،جس کے باعث عوام کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا،جبکہ گزشتہ روز میڈیکل سٹوروں کی پانچ روزہ بندش کے بعد ٹھٹھہ صادق آ‘بادنواح کے علاقوں کے میڈیکل سٹور دوبارہ کھول دئیے گئے۔شاہ جمال سے نمائندہ پاکستان کے مطابق نئے ڈرگ ایکٹ کے خلاف شاہ جمال،شریف چھجڑا،مہر پور،دانڑیں،چوک مکول ودیگرعلاقوں میں آج پانچویں روز بھی ہڑتال جاری رہی جس کی وجہ سے نسخہ جات ہاتھ میں لیئے لوگ مارے مارے پھرتے رہے علاوہ ازیں اتائیت کے خلاف عدالت عظمیٰ کے حکم کے بعد جاری آ پریشن کی وجہ سے دور دراز کے دیہاتوں بیٹ دریائی،رند اڈا،بیٹ کبھڑ،بیٹ چین والا،بیٹ بیت والا،بیٹ قائم شاہ،پتی کہیری،پتی میر میرانی،احمد مو ہانہ،کھلنگ شمالی جہاں ہسپتال سمیت سرکاری سطح پر کسی بھی قسم کی کوئی طبی سہولیات میسر نہیں ہیں اتائی ڈاکٹر چھوٹی موٹی تکالیف یا ابتدائی طبی امداد کا واحد ذریعہ ہیں غائب ہو گئے ہیں۔کوٹ ادو سے تحصیل رپورٹر کے مطابق ڈرگ ایکٹ2017کے ظالمانہ اقدام کے خلاف کوٹ ادو شہر میں میڈیکل سٹوروں کی مکمل شٹر ڈاؤن5ویں وز بھی جاری رہی اور شہر کے تمام میڈیکل سٹور بند رہے جبکہ مریض ادویات کیلئے خوار ہوتے رہے،موضع طلائی چندھرڑ شرقی سیرانی چوک پل دیوان والی کے رہائشی محنت کش محمد یامین کا 3سالہ بیٹا جہانگیر جسے الٹی اور خون کے پیچش لگے جس کی وجہ سے بخار بھی ہو گیا،4روز سے دوائی کیلئے مارا مرا پھرنے کے بعد گزشتہ روز وہ بیٹے جہانگیر کو لیکر پریس کلب کوٹ ادو پہنچ گیا جہاں اس نے روتے ہوئے بتایا کہ اس کا بیٹا 4روز سے بیمار ہے اور صاکٹروں نے دوائی لکھ کر دی ہے مگر دوائی اسے کہیں سے نہیں مل رہی،اس نے چیف جسٹس آف پاکستان ثاقب نثار سے مطالبہ کیا کہ وہ اس کا از خود نوٹس لیکر میڈیکل سٹوروں کی ہڑتال ختم کرائیں۔بہاولپور سے نامہ نگار کے مطابق بہاولپورمیں کیمسٹوں کی ہڑتال چوتھے روز بھی جاری مریضوں کوشدید پریشانی کاسامنا مریض عطائیوں کے رحم وکرم پرزندگی گزارنے پرمجبور حکومت ہڑتال ختم کرانے کیلئے فوری اقدامات کرے پنجاب بھرکی طرح بہاولپورمیں بھی کیمسٹوں اورمیڈیکل سٹورمالکان کی ہڑتال جاری ہے یہ ہڑتال پانچویں روز میں داخل ہوچکی ہے لیکن اس کے خاتمے کے کوئی سعی نہیں کی جارہی ۔ترنڈہ محمد پناہ سے نمائندہ پاکستان کے مطابق ترنڈہ محمدپناہ ودیگر نواحی قصبہ جات نوروالا ،بیٹ ظاہر پیر ،طاہر والی ،جندوپیر کمال میں پانچویں روز بھی میڈیکل سٹورز کی مکمل شٹر ڈاؤن ہڑتال جاری رہی جس سے مقامی لوگوں کو ادویات نہ ملنے کے سبب شدید پریشانی کا سامنا ہے ۔چنی گوٹھ سے نامہ نگار کے مطابق چنی گو ٹھ اور گردونواح میں پنجاب کے دوسرے چھو ٹے بڑے شہروں کی طرح میڈ یکل سٹور پا نچو یں روز بھی بند رہے ۔شو گر اور دل امراض میں مبتلا افراد ادویات خر یدنے کے لیئے پورے شہر کا چکر لگاتے رہے مگر ادو یات کی خر یداری سے نا کام رہے ۔کیمسٹ ایسو سی ایشن کے صدر چو ہدری محمد اکرم اور دیگر عہدے داروں محمد عمران چو ہدری ،چو ہدری عبدالقیوم ،عبدالرحمن نے کہا کہ جب تک 1976ایکٹ بحال نہیں ہو جاتا اس وقت تک ہڑ تال ختم نہیں کریں گے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...