کل ہونیوالا قومی ورکرزکنونشن تاریخ ساز ہوگا،لیاقت بلوچ

کل ہونیوالا قومی ورکرزکنونشن تاریخ ساز ہوگا،لیاقت بلوچ

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) متحدہ مجلس عمل اور جماعت اسلامی کے مر کزی سیکرٹری جنرل لیاقت بلو چ نے کہا ہے کہ متحدہ مجلس عمل کے زیر اہتمام دو مئی کو اسلام آباد کے جناح کنو نشن سینٹر میں منعقد ہو نے والا قومی ور کر کنو نشن اپنی نو عیت کے اعتبار سے تاریخ ساز ہو گا ،جس میں ایم ایم اے میں شامل پانچوں جماعتوں کے مر کزی صو بائی ،ضلعی اور یونین کونسل سطح کی قیادت کو جمع کیا جا رہا ہے ، اس قومی کنونشن میں ہر سطح کی قیادت کے سامنے ایم ایم اے کامنشور ،رابطہ عوام مہم اور رمضان المبارک کے پرو گرامات کی تفصیلات اورآئندہ90دن کا پورا لائحہ عمل پیش کی جا ئے گا ۔انھوں نے کہاایم ایم اے 13مئی کو مینار پاکستان کے مقام پر پنجاب بھر کی عوام کا ایک عظیم الشان جلسہ عام منعقد کر ے گی ، متحدہ مجلس عمل عوام کو ظلم اور جبر کے اس نظام سے نجات دلاتے ہو ئے نظام مصطفی کے قیام اور شمع رسالت کے پروانوں کو متحد اور متحرک کر ے گی ۔ان خیالات کا اظہار انھوں نے جناح کنو نشن سینٹر میں انتظامی کمیٹیوں کے جا ئزہ اجلاس میں شر کت کے بعد پر یس کانفر نس سے خطاب کر تے ہو ئے کیا ۔ اس موقع پرعلامہ شاہ انس نو رانی ، علامہ عارف واحدی ، محمد خان لغاری ، نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان میاں محمد اسلم ، طارق منیر بٹ ، محمد کاشف چوہدری ، مفتی عبداللہ ،قاری سہیل عباسی ،اشتیاق بٹ اور دیگررہنماء بھی مو جو د تھے ۔لیاقت بلو چ نے کہامتحدہ مجلس عمل کی بحالی سے محب دین اور محب وطن پاکستانیوں کو بڑا حو صلہ ملا ہے اور عوام الناس میں ایک نئی اُمید اور عزم پیدا ہو ا ہے ،انھوں نے کہا دینی جماعتوں کے اس اتحاد کے قیام کے ساتھ ہی سیکولر ، استعمار اور اغیار کا ذہنی غلام طبقہ جیسے پاکستان کے اسلامی اور نظریاتی کردار سے چڑ ہے انھیں ایم ایم اے کے قیام بجلی کے جھٹکے کی طر ح لگا ہے ،متحدہ مجلس عمل کے قیام کے ساتھ ہی مر کز ، صو بے اور اضلاع کی سطح پر موجود تمام دینی جماعتوں کے کار کنان کے اندر کا مل یکسوئی پائی جا تی ہے ، انھوں نے کہا قومی سیاست اور جمہوریت اور ریاستی نظام کو کرپٹ مافیا ، جاگیر داروں ، وڈیروں ،سر مایہ داروں ،دھڑا بندیوں اور چوہدھرہٹ نے بد نام کر کے رکھ دیا ہے ،سیاست کے بازار میں بڑے دعوئے دار ناکام ہو چکے ہیں ان کے رویوں کی وجہ سے ریاست اور سیاست کے درمیان تصادم ملک کے لیے خطر ناک شکل اختیار کر رہا ہے ،انشاء اللہ ایم ایم اے سیاست اور ریاست کے درمیان توازن پید ا کر ے گی اور دینی قیادت سیاست میں امانت ،دیانت اور قومی وسائل کی منصفا نہ تقسیم کی بنیاد پر ایک نیا بیانیہ قوم کے سامنے پیش کر ے گی ۔ایک سوال کے جو اب میں انھوں نے کہا ہمارا مطالبہ ہے کہ قومی انتخابات آئین کی روشنی میں بر وقت ہو نے چاہیں، ہم انتخابات کے التوا کی صورت میں ملکی آئین کی پامالی کسی صورت نہیں ہو نے دیں گے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...