سی پیک: تنازعات کے فوری حل کیلئے علیحدہ نظام پر غور

سی پیک: تنازعات کے فوری حل کیلئے علیحدہ نظام پر غور
سی پیک: تنازعات کے فوری حل کیلئے علیحدہ نظام پر غور

  


لاہور (ویب ڈیسک) سی پیک سے متعلقہ چینی اور پاکستانی شہریوں کے درمیان تنازعات کے فوری حل کیلئے علیحدہ نظام کے بارے میں غو رو خوض شروع کردیا گیا۔

روزنامہ 92 کے مطابق برادر ملک چین کی پاکستان میں سرمایہ کاری کو قانونی تحفظ دینے اور ان کی سرمایہ کاری سے متعلقہ ممکنہ طور پر پیدا شدہ تنازعات کے حل کے لیے علیحدہ عدالتیں قائم کرنے کی تجویز پر غور کیا جارہا ہے۔ حکومت نے اس حوالے سے متعلقہ محکموں اور اداروں سے رپورٹس اور تجاویز بھی طلب کرلی ہیں۔

اخباری ذرائع نے بتایا کہ حکومت نے سی پیک روڈ، پاک چائنہ تجارت اور چین کی پاکستان میں سرمایہ کاری اور مختلف منصوبوں کی تعمیر کے لیے پاکستانیوں کے ساتھ زمینوں کے لین دین کے معاملات، اداروں کے ساتھ معاہدے، ٹیکسز، تجارتی ڈیوٹیوں اور ہر قسم کے تنازعات کے حل کے حوالے سے فوری انصاف فراہم کرنے کے لیے علیحدہ سے عدالتیں یا ادارہ بنانے کی تجویز دی ہے تاکہ چینی لوگوں کو عدالتوں اور مختلف اداروں کے چکر نہ لگانے پڑیں۔ اس حوالے سے بین الاقوامی قوانین کا بھی جائزہ لیا جارہا ہے کہ بیرونی سرمایہ کاری کو کس طرح تحفظ دیا جاسکتا ہے اور پاکستانی شہریوں کے حقوق کا کس طرح خیال رکھاجاسکتا ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور


loading...