وہ انوکھی گھڑی جو آپ کے بازو کو ٹچ سکرین بنا دے گی، کتنے کی ہے اور کیا خصوصیات ہیں؟ جانئے

وہ انوکھی گھڑی جو آپ کے بازو کو ٹچ سکرین بنا دے گی، کتنے کی ہے اور کیا خصوصیات ...
وہ انوکھی گھڑی جو آپ کے بازو کو ٹچ سکرین بنا دے گی، کتنے کی ہے اور کیا خصوصیات ہیں؟ جانئے

  


سان فرانسسکو(نیوز ڈیسک)ٹیکنالوجی بہت ترقی کر گئی ہے، یہ تو آپ جانتے ہی ہوں گے، لیکن کیا یہ بھی جانتے ہیں کہ اب آپ اپنے جسم کو بھی ٹچ سکرین کے طور پر استعمال کر سکتے ہیں؟ ارے صاحب، ذرا اس نئی سمارٹ واچ کو تو دیکھئے! آپ اسے پہنئے اور بس سمجھئے کہ آپ کا بازو ٹچ سکرین بن گیا۔ اب اپنے بازو پر نظر آنے والی ورچوئل سکرین پر کسی بھی بٹن کو ٹچ کیجئے اور یہ اسی طرح کام کرے گی جیسے آپ کے موبائل فون یا ٹیبلٹ کی سکرین کام کرتی ہے ۔

یہ نئی ایجاد کارنیگی میلن یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے کی ہے جس میں لگا پروجیکٹر صارف کے بازو یا ہتھیلی کو ٹچ سکرین میں بدل دیتاہے۔ لیومی واچ (LumiWatch) دنیا کی پہلی سمارٹ واچ ہے جس میں لیزر پروجیکٹر اور سینسر ایرے کا استعمال کیا گیا ہے۔ یوں اس کا ڈسپلے عام سمارٹ واچ سے تقریباً پانچ گنا بڑا ہے۔اس میں کوالکوم 1.2 گیگاہرٹز کواڈکور سی پی یو استعمال کیا گیا ہے جبکہ اس میں اینڈرائیڈ 5.1 ، 788 ایم بی ریم، 4 جی بی میموری اور 740mAhلیتھیم آئرن بیٹری استعمال کی گئی ہے۔

اس سمارٹ واچ میں اینڈرائیڈ آپریٹنگ سسٹم استعمال کیا گیا ہے جبکہ یہ بلیوٹوٹھ اور وائی فائی سے بھی کنیکٹ ہوسکتی ہے۔ رواں ہفتے اس کے پروٹوٹائپ ماڈل کی ویڈیو بھی پوسٹ کی گئی ہے جس میں دکھایا گیا ہے کہ کیسے یہ سمارٹ واچ پروجیکٹر کے ذریعے صارف کے بازو یا ہتھیلی پر ورچوئل سکرین بنادیتی ہے جس پر ٹچ کرکے صارف سکرین کا کوئی بھی فنکشن بآسانی استعمال کرسکتا ہے۔

سمارٹ واچ کو ان لاک کرنا ہو یا کسی ایپ کو کھولنا ہو، کسی فوٹو کو ایڈٹ کرنا ہو یا کوئی میسج لکھنا ہو، یہ سب کچھ صارف اپنے بازو پر پروجیکٹر کے ذریعے بنی ورچوئل سکرین سے کرسکتا ہے۔ مزید دلچسپ بات یہ ہے کہ اس سمارٹ واچ کی قیمت اس وقت مارکیٹ میں موجود اسی معیار کی دیگر ٹیکنالوجی کی نسبت کم ہوگی۔ توقع کی جارہی ہے کہ یہ 600 ڈالر (تقریباً 69 ہزارپاکستانی روپے) میں دستیاب ہوگی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /سائنس اور ٹیکنالوجی


loading...