حکومت کا کسانوں، پولٹری فارمز کو 53ارب کی سبسڈی دینے کا منصوبہ تیار

  حکومت کا کسانوں، پولٹری فارمز کو 53ارب کی سبسڈی دینے کا منصوبہ تیار

  

کراچی (سٹاف رپورٹر) حکومت نے کسانوں اور پولٹری فارمرز کیلئے کْل 53 ارب روپے کی سبسڈی دینے کا منصوبہ بنا لیا۔تفصیلات کے مطابق زرعی پیداوار میں اضافے اور کسانوں کی مالی حالت بہتر کرنے کیلئے حکومت خریف سیزن میں کھاد پر 37 ارب روپے کی سبسیڈی دینے کا ارادہ رکھتی ہے۔ذرائع کے مطابق ڈی اے پی کھاد پر 925 روپے فی بوری جبکہ یوریا کھاد پر 234 روپے فی بوری سبسڈی دیے جانے کا امکان ہے۔کاشتکاروں کیلئے شرح سود میں کمی کا بھی امکان ہے، جس میں شرح سود کو10 فیصد تک لائے جانے کا امکان ہے، جو اس وقت 18 فیصد ہے جس سے کسانوں کو لگ بھگ 9 ارب روپے کا فائدہ ہوگا۔حکومت کپاس کے بیج کم قیمت پر فروخت کرنے پر بھی غور کر رہی ہے، اس مقصد کیلئے 2 ارب 30 کروڑ روپے کی سبسیڈی دیے جانے کا امکان ہے۔دوسری جانب شادی ہالز کی بندش کے باعث پولٹری کا کاروبار کرنیوالوں کا بڑا نقصان ہوا ہے۔ حکومت اس مقصد کیلئے پولٹری فارمرز کے قرضوں کو ایک سال کیلئے موخرکرنے کا اردہ رکھتی ہے اور اس شعبے کو 4 ارب 70 کروڑ روپے کی سبسڈی دیے جانے کا امکان ہے۔

کسان سبسڈی

مزید :

صفحہ اول -