عرب ممالک میں 21ہزار پاکستانی نوکری سے محروم ہو گئے: زلفی بخاری

عرب ممالک میں 21ہزار پاکستانی نوکری سے محروم ہو گئے: زلفی بخاری

  

جدہ،اسلام آباد(محمد اکرم اسد، سٹاف رپورٹر) وزیراعظم کے معاون خصوصی سمندر پار پاکستانیز ذوالفقار عباس بخاری المعروف زلفی بخاری نے کہا ہے کہ سعودی عر ب کیلئے ہفتہ وار دو فلائٹس چلائی جائیں گی تاکہ ہم وطنوں کو وطن واپس لایا جاسکے،ذوالفقار بخاری سعودی عرب میں کیمونٹی ممبران سے آن لائن کانفرنس کر رہے تھے۔سمندر پار پاکستانیوں کے معاون خصوصی ذوالفقار عباس بخاری نے کورونا وائرس کے بعد تبدیل ہوتی صور تحال اور دیار غیر میں پاکستانیوں کو درپیش مسائل کو سننے کیلئے آن لائن کانفرنس کے ذریعے پی ٹی آئی سعودی عرب کے عہدیدار ون اور چند کمیونٹی اراکین سے آن لائن ویڈیو کانفرنس پر بات کررہے تھے۔ ذوالفقار بخاری کا کہنا تھا سعودی عرب میں پندرہ ہزار کے قریب ورکرز کی نوکر یاں ختم ہوئی ہیں، جبکہ وزٹ ویزا پر سعودی عرب میں چار ہزار کے قریب افراد موجود ہیں، جو فلائٹس کی بندش کے باعث واپس نہیں جاسکے ان تمام افراد کی واپسی کیلئے ہفتہ وار دو فلائٹس چلائی جا ہیں گی جن کی تعداد کو بڑھایا بھی جاسکتا ہے،ان تمام فلائٹس میں سعودی عر ب میں مر نیو الوں کی میتوں کو بھی پاکستان بھیجا جاے گا، ہماری کوشش ہے اقامہ ہولڈرز کی وطن واپسی کو بھی جلد ممکن بنایا جاسکے، سعودی وزارت افرا د ی قوت کے وزیر سے بات کرکے ورکرز کی تنخواہوں اور ان کے بقایاجات کی ادائیگی کیلئے کہا ہے جس پر سعودی وزیر نے انہیں یقین دہانی کر وائی ہے کہ ورکرز کو ان کی مراعات کیساتھ روانہ کیا جاے گا، ہم ایسے تمام بیروزگار ہونیوالے ورکرز اور خاندانوں کا ڈیٹا اکٹھا کر رہے ہیں، تاکہ ان کو سفار تخا نہ پاکستان کے ذریعے راشن پہنچایا جاسکے، زلفی بخاری نے کہا سعودی عرب میں پاکستا نی سکولوں کو طلباء کو فیسوں میں رعایت دینے کی کوشش کی جائیگی۔ ریاض میں سفار تخانے نے آن لائن کچھ صحافیوں کو مدعو کیا جبکہ جدہ قو نصلیٹ نے کسی صحافی کو کانفرنس کی دعوت نہیں دی۔قبل ازیں برطانوی نشریاتی ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے معاون خصوصی زلفی بخاری کا کہنا تھا عرب ممالک میں 21 ہزار پاکستانی نوکری سے محروم ہوگئے، ہر ہفتے سا ت ہزار لوگ واپس آئیں گے، تو غصہ اور پریشانی کم ہو گی۔ زلفی بخاری نے کہا کہ کورونا کے با عث فضائی آپریشن معطل ہونے کے بعد بیرونِ ملک پھنسے ہوئے پاکستانیوں کی واپسی کی کوششیں تیز ہو رہی ہیں، اور جلد ہی ہر ہفتے سات ہزار پاکستانیوں کو واپس وطن لایا جارہا ہے۔ حکومت کوشش کر رہی ہے، کہ کورونا کی وبا پھیلنے کے بعد بیرونِ ملک کام کرنیوالے جن پاکستانیو ں کو رخصت پر بھیج دیا گیا تھا، حالات میں بہتری آنے کے بعد ان کی نوکریوں پر واپسی کو یقینی بنایا جائے۔ پاکستان پر خلیجی ممالک کی جانب سے کوئی دباؤ نہیں کہ وہ اپنے شہریوں کو واپس بلائے۔

زلفی بخاری

مزید :

صفحہ آخر -