”پٹرولیم قیمتیں مزید کم کی جائیں‘ موجودہ حالات میں درست فیصلہ ہے“

  ”پٹرولیم قیمتیں مزید کم کی جائیں‘ موجودہ حالات میں درست فیصلہ ہے“

  

ملتان (سٹاف رپورٹر) پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں مزید کمی کی جائے‘ عالمی مارکیٹ میں قیمتوں میں تاریخی کمی ہوئی ہے‘ موجودہ حالات کے مطابق اچھا فیصلہ ہے‘ ان خیالات کا اظہار حکومت کی طرف سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی پر مختلف شعبوں کے افراد نے”روزنامہ پاکستان ٹیلیفونک فورم“ میں ملا جلا ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کیا۔پٹرولیم ڈیلرز ایسوسی (بقیہ نمبر37صفحہ7پر)

ایشن کے رہنما شیخ اشفاق نے کہا کہ اس وقت پٹرول اور لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 15روپے اور ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 27روپے فی لیٹر کمی ہوئی ہے‘ عالمی سطح کے تناسب سے یہاں پٹرولیم کی قیمتیں کم نہیں کی گئیں اور اس تناسب سے 50فیصد سے بھی کم ریلیف دیا گیا ہے‘2ہفتے قبل آئی ایم ایف نے پاکستان کو قرض دیتے ہوئے یہ معاہدہ لیا تھا کہ عالمی سطح پر پٹرول کی قیمتوں میں کمی کا پاکستان میں عوام کو ریلیف نہیں دیاجائے گا بلکہ اس بارے میں کرونا وائرس کے باعث پیش آنے والی مالی بحران کو مدنظر رکھا جائیگا‘ آل پاکستان سوئی گیس کنٹریکٹرز ایسوسی ایشن کے صدرو نائب صدرآل پاکستان انجمن تاجران الحاج محمد ادریس بٹ نے کہا ہے کہاس وقت کرونا وائرس کے باعث معیشتیں زوال پذیر ہیں‘اگرچہ عالمی سطح پر پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بہت زیادہ کم ہوئی ہیں مگر کرونا وائرس کے باعث موجودہ حالات میں یہ درست فیصلہ ہے‘ ایس ای ایس ٹیچرز ایسوسی ایشن کے صوبائی سرپرست اعلی ٰ رانا اسلم انجم اور سیکرٹری اطلاعات ملتان ڈویژن راؤ ساجد مصطفی نے کہا ہے کہ عالمی مارکیٹ میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ریکارڈ کمی ہوئی ہے جس کی تاریخ میں مثال نہیں ملتی‘ حکومت کو قیمتوں میں مزید کمی کرنا چاہئیے‘ تاہم اگر کرونا وائرس کے مسئلے کو دیکھا جائے تو معاشی بحران میں یہ درست فیصلہ ہے اور یہی غنیمت ہے۔سماجی رہنما باجی نسرین نے کہا ہے کہ ہمیشہ ایسا ہی ہوا ہے کہ عالمی سطح پر قیمتیں بڑھیں تو پاکستان میں فوری قیمتیں بڑھا دی جاتی ہیں اور اگر عالمی سطح پر قیمتیں کم ہوجائیں تو اس کا اتنا ریلیف عوام کو نہیں دیاجاتا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -