فیوچر ٹرسٹ اورکیمیکل اینڈ بائیولوجیکل سائنسز کے درمیان معاہدہ

فیوچر ٹرسٹ اورکیمیکل اینڈ بائیولوجیکل سائنسز کے درمیان معاہدہ

  

لاہور (پ ر)کورونا کے خلاف جنگ اور طبی تحقیق کے ذریعے صحت پر وائرس کے طویل المدتی اثرات کو کم کرنے کے لئے مقامی صلاحیت پیدا کرنے کی کوششوں کے حوالے سے فیوچر ٹرسٹ نے حاملہ خواتین میں وائرس کی منتقلی کے بارے میں اسٹڈی کے لئے انٹرنیشنل سینٹر فار کیمیکل اینڈ بائیولوجیکل سائنسز (آئی سی سی بی ایس) کو 1.5 ملین روپے کا گرانٹ جاری کیا ہے۔ یہ عطیہ جے ایس بینک کے توسّل سے آئی سی سی بی ایس کو جاری کیا گیا ہے۔یہ عطیہ فیوچر ٹرسٹ کی جانب سے میڈیکل اینڈ ٹیکنالوجی ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ کے ذریعے وائرس کے طویل المدتی صحت کے اثرات کو کم کرنے کی سمت طویل المدتی حل تلاش کرنے کی مہم کا ایک حصہ ہے۔جے ایس بینک کے صدر و سی ای ا و باصر شمسی نے کہا کہ ہمیں پاکستان اور حقیقت میں دنیا کیلئے طویل المدتی حل پر غور کرنے کی ضرورت ہے۔ آئی سی سی بی ایس کے ساتھ کام کرنا کسی ایسے راستے کی تلاش اور اس میں شامل ہونے کا ایک موقع ہے جس سے یہ شناخت کرنے میں مدد ملے گی کہ وائرس پاکستان میں لوگوں کو بالخصوص خواتین اور نوزائیدہ بچوں کو کس طرح متاثر کر رہا ہے۔ اقبال چوہدری نے کہا کہ فیوچر ٹرسٹ پاکستان میں ان چند اداروں میں شامل ہے جو وقت کی ضرورت کو سمجھ چکے ہیں جس میں طبی تحقیق ہے جو طویل المدتی علاج کی بنیاد پر ہوگی۔ ہم فیوچر ٹرسٹ کے ساتھ طویل المدت تعلقات کے منتظر ہیں جس سے وقت گذرنے کے ساتھ ساتھ پاکستان زبردست طریقے سے مستفید ہوگا۔ شراکت داری کے حوالے سے اظہار خیال کرتے ہوئے آئی سی سی بی ایس کے پیٹرن اِن چیف ڈاکٹر عطاء الرحمن نے کہاکہ جے ایس بینک جیسی کارپوریشنز کو COVID-19کے طویل مدتی علاج کے لئے سائنسی اختیارات کی تلاش میں دلچسپی لیتے دیکھ کر خوشی ہوتی ہے۔فیوچر ٹرسٹ ایک غیر منافع بخش فلاحی ادارہ ہے جو جے ایس گروپ کی جانب سے غربت کے خلاف ٹیکنالوجی اور جدت کی ترقی و فروغ اور پاکستان کے عوام کی سماجی و اقتصادی بہتری اور زندگی کے معیار کو بہتر بنانے کے لئے قائم کیا گیا ہے۔

مزید :

کامرس -