کورونا وائرس کے دوران سوشل میڈیا پر ایک کمنٹ کی وجہ سے ملکہ حسن کو اغوا کر کے جنسی زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا

کورونا وائرس کے دوران سوشل میڈیا پر ایک کمنٹ کی وجہ سے ملکہ حسن کو اغوا کر کے ...
کورونا وائرس کے دوران سوشل میڈیا پر ایک کمنٹ کی وجہ سے ملکہ حسن کو اغوا کر کے جنسی زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا

  

ابوجہ(مانیٹرنگ ڈیسک) نائیجیریا میں ایک اعلیٰ سرکاری عہدیدار نے سوشل میڈیا پر ایک کمنٹ کرنے کی وجہ سے ملکہ حسن کو اغواءکرکے جنسی زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق ملکہ حسن الزبتھ اوینی نے الزام عائد کیا ہے کہ اس نے نائیجیریا کے علاقے کوگی کے کمشنر برائے آبی وسائل کی ایک پوسٹ پر کمنٹ کیا تھا جس میں اسے نصیحت کی تھی کہ وہ اپنے فیملی ممبرز کے متعلق ذمہ دارانہ روئیے کا مظاہرہ کرے۔

کمشنر نے سوشل میڈیا پر ایک تصویر پوسٹ کی تھی جس میں وہ کورونا وائرس کی وجہ سے مستحق لوگوں میں امدادی سامان بانٹ رہا ہوتا ہے۔ اس کمشنر کی ایک غریب بہن الزبتھ کی سہیلی تھی اور وہ اس کی زبوں حالی جانتی تھی۔ الزبتھ نے بتایا کہ ”میں کمشنر کی بہن کے متعلق جانتی تھی کہ وہ بہت غریب ہے چنانچہ میں نے کمشنر کوکمنٹ میں نصیحت دی کہ نیک کام کی شروعات گھر سے کی جاتی ہے اور اسے اپنے گھر والوں کے متعلق ذمہ دارانہ رویہ اپنانا چاہیے۔“

الزبتھ نے بتایا کہ اس کے اگلے ہی دن کمشنر نے مجھے اغواءکروا لیا اور بدترین جسمانی و جنسی تشدد کا نشانہ بناڈالا۔ اس نے کچھ لڑکے بھیجے اور انہیں میرے ساتھ اپنی بہن کو بھی اغواءکرکے لانے کو کہا۔ وہ ہم دونوں کو اٹھا کر لے گئے۔ وہاں انہوں نے میرے کپڑے پھاڑ کر مجھے برہنہ کر دیا اور برہنگی میں میری ایک ویڈیو بنائی۔ اس کے بعد کمشنر نے مجھے زیادتی کا نشانہ بنایا۔ اس نے مجھے دھمکی دی کہ اگر میں نے زبان کھولی تو وہ میری یہ ویڈیو وائرل کر دے گا۔ اس نے مجھے حکم دیا کہ میں سوشل میڈیا پر ایک پوسٹ کروں اور اس میں اپنے اس کمنٹ پر اس سے معافی مانگوں۔اس نے مجھے چوبیس گھنٹے تک اپنے پاس محبوس رکھا۔ مجھے خطرہ ہے کہ وہ دوبارہ مجھ پر حملہ کروائے گا۔ مجھے انصاف دلایا جائے۔“الزبتھ کے اس بیان پر مبنی ویڈیو سامنے آنے کے بعد کوگی کے گورنر یحییٰ بیلو نے واقعے کی تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -