فکسنگ کے اعتراف کا الزام، سابق ٹیسٹ کرکٹر باسط علی بھی میدان میں آ گئے

فکسنگ کے اعتراف کا الزام، سابق ٹیسٹ کرکٹر باسط علی بھی میدان میں آ گئے
فکسنگ کے اعتراف کا الزام، سابق ٹیسٹ کرکٹر باسط علی بھی میدان میں آ گئے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق ٹیسٹ کرکٹر باسط علی نے 1994ءمیں فکسنگ کا اعتراف کرنے سے متعلق پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی ) کے سابق چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) عارف عباسی اور سابق ٹیم منیجر انتخاب عالم کے دعوے مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر یہ ثابت ہو جائے تو مجھے پھانسی چڑھا دیا جائے۔

تفصیلات کے مطابق سابق سی ای او پی سی بی عارف عباسی نے اپنے ایک ویڈیو بیان میں کہا کہ 1994ءمیں سری لنکا کے دورے کے بعد منیجر انتخاب عالم نے بتایا تھا کہ باسط علی نے فکسنگ کا اعتراف کر لیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ بطور پی سی بی چیف ایگزیکٹو انتخاب عالم کو ٹور رپورٹ میں واقعہ درج کرنے کو کہا لیکن افسوس کہ انتخاب عالم نے اپنی رپورٹ میں اس واقعے کا ذکر نہیں کیا اور ایسا کر کے بہت غلط کیا گیا۔

بعد ازاں انتخاب عالم نے بھی عارف عباسی کے بیان کی تصدیق کی اور کہا کہ عارف عباسی سے باسط علی کے فکسنگ اعتراف کا ذکر کیا تھا لیکن ثبوت نہ ہونے کی وجہ سے اپنی رپورٹ میں اس کا ذکر نہیں کیا۔ اگر میں اپنی رپورٹ میں اس کا ذکر کر دیتا اور باسط علی مکر جاتے تو میرے پاس اپنی بات ثابت کرنے کیلئے کچھ نہیں تھا، اس لئے رپورٹ میں ذکر نہیں کیا۔

تاہم اب سابق ٹیسٹ کرکٹر باسط علی نے عارف عباسی اور انتخاب عالم کے دعوے کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ کوئی ثابت کردے کہ میں نے فکسنگ کا اعتراف کیا تھا تو مجھے پھانسی پرلٹکا دیا جائے۔انہوں نے کہا کہ دنیا کی کسی بھی عدالت میں کوئی یہ ثابت کرے تو سزا کیلئے تیار ہوں، عارف عباسی کے بیان کے بعد انتخاب عالم سے میری بات ہوئی ہے اور یہ دونوں افراد میرے بڑے ہیں جن لوگوں نے میرے حوالے سے فکسنگ کا کہا غلط کہا، عارف عباسی کا دعویٰ جھوٹا ہے، ان کے خلاف عدالت سے رجوع کروں گا۔

خیال رہے کہ یہ معاملہ ایسے وقت پر شروع ہوا ہے جب سابق کپتان سلیم ملک نے فکسنگ کے حوالے سے سارے راز بتانے کی حامی بھرتے ہوئے 19 سال بعد قوم سے معافی مانگی تھی۔اس سے قبل انہوں نے مطالبہ کیا تھا کہ محمد عامر اور شرجیل خان کی طرح انہیں بھی کرکٹ میں واپسی کا موقع دیا جائے۔سلیم ملک کے اس بیان کے بعد سے پاکستان کرکٹ ٹیم میں ماضی میں ہونے والی بدعنوانیوں سے متعلق روز نئے انکشافات سامنے آ رہے ہیں۔

مزید :

کھیل -