"کچھ لوگوں کیلئے شراب دوائی کی طرح ہے، شراب کی دکانیں نہ کھلیں تو لوگ کچی شراب پی کر مریں گے" مری بریوری کے مالک نے حکومت سے اپیل کردی

"کچھ لوگوں کیلئے شراب دوائی کی طرح ہے، شراب کی دکانیں نہ کھلیں تو لوگ کچی شراب ...

  

 راولپنڈی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان میں الکوحل  کی پراڈکٹس بنانے والی کمپنی مری بریوری کے مالک اسفن  یار بھنڈارہ کا کہنا ہے کہ کچھ لوگوں کیلئے شراب دوائی کی طرح اہم ہے، اگر شراب کی دکانیں نہ کھولی گئیں تو لوگ گھر کی بنی ہوئی کچی شراب پی کر مریں گے۔

انڈیپنڈنٹ اردو کو دیے گئے انٹرویو میں اسفن یار بھنڈارہ نے بتایا کہ مری بریوری سے ہر مہینے 150 سے 200 ٹرک ملک بھر میں سپلائی کیے جاتے ہیں جن میں ہزاروں بوتلیں ہوتی ہیں۔ سندھ میں شراب کی دکانیں زیادہ ہیں جبکہ پنجاب میں 8 سے 10 فائیو سٹار ہوٹل شراب فروخت کرتے ہیں۔

اسفن یار بھنڈارہ نے کہا کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے شراب کی دکانیں بھی بند ہوگئی ہیں۔ بہت سے لوگ ایسے ہیں جن کیلئے شراب  دوائی کی طرح  اہم ہے، اگر انہیں شراب نہیں ملے گی تو وہ گھر میں بنی ہوئی کچی شراب یا سپرٹ پی کر مریں گے۔ اس لیے حکومت کچھ دنوں کیلئے شراب خانے کھولنے ی اجازت دے تاکہ لوگ اپنے پاس شراب کا ذخیرہ کرلیں، اس طرح غیر معیاری شراب کی وجہ سے ہلاکتیں بھی رک جائیں گی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -علاقائی -پنجاب -راولپنڈی -