کورونا ایس او پیز پر عمل درآمد کیلئے بھر پور اقدامات کو یقینی بنایا جائے: آئی جی پنجاب 

کورونا ایس او پیز پر عمل درآمد کیلئے بھر پور اقدامات کو یقینی بنایا جائے: آئی ...

  

لاہور(کرائم رپورٹر)انسپکٹرجنرل پولیس پنجاب انعام غنی نے کہا ہے کہ رمضان کے آخری عشرے میں صوبہ بھر میں جرائم کنٹرول کے ساتھ ساتھ موثر سیکیورٹی پلان سمیت کورونا ایس او پیز پر عمل درآمد یقینی بنانے کیلئے جامع حکمت عملی کے تحت بھرپور اقدامات کو یقینی بنایا جائے تاکہ شہریوں کی جان و مال کے تحفظ کیساتھ انہیں کورونا کے خطرات سے محفوظ رکھنے میں کوئی کسر باقی نہ رہے یوم حضرت علی ؓ،جمعتہ الوداع اور عید الفطرپر سکیورٹی کی فراہمی اور کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد کے لیے ضلعی انتظامیہ، منتظمین اور تمام فریقین سے قریبی رابطہ رکھا جائے اورسکیورٹی انتظامات کے دوران متعلقہ اسٹیک ہولڈرز کی سفارشات کو بھی مد نظر رکھا جائے انہوں نے مزیدکہاکہ ماہ مقدس کے آخری عشرے میں جرائم پیشہ افراد کے گرد گھیراتنگ کرنے کیلئے حساس مقامات پر پولیس کی اضافی ٹیموں کی تعیناتی سمیت پٹرولنگ نفری اور دورانئے میں اضافے پر فوکس کیا جائے اور سینئر افسران خود بھی فیلڈ میں نکل کر سیکیورٹی انتظامات کا جائزہ لیتے رہیں۔ انہوں نے مزیدکہاکہ حساس مذہبی اور عوامی مقامات کے گردو نواح میں سرچ، سویپ کومبنگ اور انٹیلی جنس بیسڈ آپریشنز روزانہ کی بنیاد پر جاری رکھے جائیں جبکہ لیلتہ القدر کے موقع پر صوبہ بھرمیں مساجد، امام بارگاہوں سمیت تمام مذہبی مقامات کی سیکیورٹی کو ہائی الرٹ رکھا جائے انہوں نے مزیدکہاکہ اشتہاری ملزمان عید الفطر کے تہوار پرعموما اپنے گھروں کا رخ کرتے ہیں انکی گرفتاری کیلئے ڈی پی اوز ذاتی نگرانی میں خصوصی پلان تشکیل دیں اور مجرمان کو پابند سلاسل کرتے ہوئے مزید قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے یہ ہدایا ت سنٹرل پولیس آفس میں منعقدہ اعلی سطحی ویڈیو لنک اجلاس کی صدارت کے دوران افسران کو ہدایات دیتے ہوئے کیا۔ دوران اجلاس رمضان کے آخری عشرے میں جرائم کنٹرول، سکیورٹی انتظامات اور کورونا ایس او پیز پر عمل درآمد بارے تفصیلی غور و حوض کیا گیا۔اجلاس میں آر پی اوز اور ڈی پی اوزنے آئی جی پنجاب کو کورونا ایس او پیز پر عمل درآمد اور سیکیورٹی انتظامات بارے بریفنگ دی اجلاس میں ایڈیشنل آئی جی انویسٹی گیشن فیاض احمد دیو، ڈی آئی جی آپریشنز سہیل سکھیرااور ڈی آئی جی کرائمز، احمد نواز چیمہ سمیت دیگر افسران موجود تھے جبکہ آر پی اوز اور ڈی پی اوز نے بذریعہ ویڈیو لنک شرکت کی۔

مزید :

علاقائی -