سٹاک ایکسچینج میں شدید مندی انڈیکس 600پوائنٹس گر گیا 92ارب 67کروڑ کا نقصان

سٹاک ایکسچینج میں شدید مندی انڈیکس 600پوائنٹس گر گیا 92ارب 67کروڑ کا نقصان

  

کراچی (اکنامک رپورٹر)پاکستان سٹاک ایکسچینج میں اپریل کا اختتام انتہائی مایوس کن انداز میں ہوا اور سرمایہ کاروں کی جانب سے لاک ڈاؤن کے نتیجے میں کاروباری سرگرمیاں متاثر ہونے کے خدشات کے پیش نظر بڑے پیمانے پر حصص فروخت کئے گئے جس کے نتیجے میں شدید مندی چھائی رہی اورکے ایس ای100انڈیکس مزید600.76پوائنٹس کی کمی سے44262.35پوائنٹس کی سطح پر آ گیا جب کہ74.38فیصد کمپنیوں کے شیئرز کی قیمتوں میں کمی ریکارڈکی گئی جس سے سرمایہ کاروں کو92ارب66کروڑ91لاکھ روپے کا نقصان اٹھانا پڑاتاہم حصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم جمعرات کی نسبت 4.65فی صدزائد رہا۔کاروبار کے اختتام پر کے ایس ای100انڈیکس600.76پوائنٹس کی کمی سے44262.35پوائنٹس سطح پربند ہواجب کہ کے ایس ای30انڈیکس 250.66پوائنٹس کی کمی سے18100.64پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس354.49پوائنٹس کی کمی سے 30017.98پوائنٹس کی سطح پرآ گیا۔انٹر بینک میں پاکستانی روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر10پیسے اور اوپن کرنسی مارکیٹ میں 20پیسے سستا ہوگیا،گزشتہ روزانٹر بینک میں ڈالر کی قیمت خرید10پیسے کی کمی سے153.45روپے سے گھٹ کر153.35روپے اور قیمت فروخت153.55روپے سے گھٹ کر153.45روپے ہو گئی جب کہ مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت خرید20پیسے کی کمی سے153.70روپے سے گھٹ کر153.50روپے اور قیمت فروخت154روپے سے گھٹ کر153.90روپے ہو گئی۔

سٹاک ایکسچینج

مزید :

صفحہ اول -