چینی کی قیمت‘فراہمی بارے آج اجلاس کرنے‘فیصلوں کی رپورٹ طلب 

 چینی کی قیمت‘فراہمی بارے آج اجلاس کرنے‘فیصلوں کی رپورٹ طلب 

  

 لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ کے مسٹر جسٹس شاہد جمیل خان نے چینی کی قیمت اور اس کی فراہمی کے بارے یکم مئی کو اجلاس کرنے اور اس کے فیصلوں کے بارے میں رپورٹ طلب کرلی  عدالت نے باور کرایا کہ حکومت کی ذمہ داری ہے کہ کھانے پینے کی اشیاء کی قیمتیں ایسی رکھیں کہ عام آدمی بھی خرید سکے،عدالت نے اپنے 4صفحات پر مشتمل تحریری حکم میں مزیدقرار دیا ہے کہ عدالت کو یہ کہنے میں کوئی ہچکچاہٹ نہیں کہ قیمتیں بازاروں کی طاقتیں کنٹرول کرتی ہیں اور اوپن مارکیٹوں میں مافیا بیٹھ کر اشیاء ضروریہ کی قیمتیں کنٹرول کرتے ہیں،عدالت نے کین کمشنر کو فراہم کی جانے چینی کے معیار کو یقینی بنانے کی ہدایت کی ہے، عدالت نے اجلاس میں عدالتی معاون چودھری سلطان اور محمد احمد قیوم کو شرکت کی ہدایت بھی کی عدالت نے نشاندہی کی کہ پنجاب حکومت اور اس کے ادارے چینی کی فراہمی کے معاملے انتظامی اعتبارسیرگومگو کا شکار ہیں، عدالت فیصلے میں مزید کہا ہے کہ ڈپٹی کمشنر لاہور عدالت کو چینی کے بارے میں اعداد و شمار کے بارے مطمئن نہیں کرسکے،ڈپٹی کمشنر لاہور نے یقین دہانی کرائی 50فیصد تک چینی کی قیمت اور فراہمی پر قابو پالیا گیا ہے،آئندہ سماعت تک ڈپٹی کمشنر نے چینی کی قیمت اور فراہمی پر 80 فیصد قابو پانے کی یقین دہانی کرائی ہے، درخواست پر مزید سماعت 7 مئی کو ہوگی۔

رپورٹ طلب

مزید :

صفحہ آخر -