تخت بھائی،کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں میں مسلسل کمی

تخت بھائی،کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں میں مسلسل کمی

  

تخت بھائی (تحصیل رپورٹر) تحصیل تخت بھائی میں گذشتہ تین روز کرونا وائرس سے متاثرہ مریضوں میں مسلسل کمی لاک ڈاون کے نتائج سامنے اچکی ہے تین روز کے دوران کرونا سے 8افراد متاثر ہو گئے ہیں جبکہ سینکڑوں کی تعداد میں مریض صحت یاب ہو چکے ہیں کرونا وائرس کی تیسری لہر کے دوران تحصیل تخت بھائی میں کرونا مریضوں کی تعداد 500تک پہنچ چکی ہے کرونا وارڈکے انچارج ڈاکٹر سید قاسم شاہ نے عوام سے اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ عوام ایس او پیز پر فوری طور پر عمل درامد کو یقینی بنایں کیونکہ کرونا وائرس کی تیسری لہر انتہائی خطرناک شکل اختیار کر لیا ہے انتظامیہ لاک ڈاون پر توجہ دیں اور پبلک ٹرانسپورٹ پر پابندی برقرار رکھیں تاکہ کرونا مزید نہ پھیل سکے 27اپریل سے لیکر 29اپریل تک کرونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 8ہے جن میں 13سالہ شایان خان 50سالہ مسماۃ شوکت بیگم 40سالہ غفران الدین 80سالہ میاں حسن شاہ 55سالہ گلاب خان 40سالہ سعید اختر اور 40سالہ مسماۃ نائلہ بی بی شامل ہیں تحصیل تخت بھائی میں کرونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 500سے تجاوز کر چکے ہیں جبکہ کرونا کے سینکڑوں متاثرہ مریض بہت تیزی کے ساتھ صحت یاب ہو رہے ہیں تخت بھائی ہسپتال کے میڈیکل سپشلسٹ اور کرونا وارڈ کے انچارج ڈاکٹر سید قاسم شاہ نے عوام سے اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ اپنے زندگی کو محفوظ بنانے کے لئے اختیاطی تدابیر پر مکمل عمل دارمد کرکے اپنی زندگی کے ساتھ ساتھ دوسرے لوگوں کی زندگیاں بھی محفوظ بنانے میں اپنا کردار ادا کریں کیونکہ کرونا وائرس کی تیسری لہر انتہائی شدت کے ساتھ پھیل رہی ہے اگر عوام نے انتظامیہ کے ساتھ تعاون نہ کیا تو حالات گھمبیر ہو جاہیں گے اور پھر ان کو کنٹرول کرنا حکومت کی بس کی بات نہیں ہو گی انہوں نے علماء کرام سے کہا کہ خدا را مساجدوں میں ایس او پیز پر بات کریں اور عوام کو قران کی روشنی میں اگاہ کریں تاکہ کرونا وائرس مزید پھیلنے سے روکا جا سکے -

مزید :

پشاورصفحہ آخر -