خواتین کو گھر کی دہلیز پر قومی شناختی کارڈز کا اجراء 

خواتین کو گھر کی دہلیز پر قومی شناختی کارڈز کا اجراء 

  

پشاور(سٹی رپورٹر) الیکشن کمیشن نے انٹرنیشنل ریسکیو کمیٹی (آئی آر سی) کے تعاون سے خواتین کو موبائل وین اور نادرا سنٹرز کے ذریعے ایک ہزار سے زائد شناختی کارڈز جاری کردیئے۔ تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن نے انٹرنیشنل ریسکیو کمیٹی (آئی آر سی) کے تعاون سے وومن اکنامک امپاورمنٹ کے تحت پشاور کے مختلف علاقوں میں مردوں اور خواتین کے درمیان جینڈر بیس کو ختم کرنے کے لئے گھر کی دہلیز پر خواتین کو قومی شناختی کارڈز کا  اجراء کیا اس حوالے سے گزشتہ روز زونل منیجر آئی آر سی رانیا تمکین‘ سوشل موبلائزر تیمور کمال اور دیگر کی نگرانی میں رانو گڑھی میں ڈیڑھ سو سے زائد خواتین کو شناختی کارڈز کا اجراء کیا گیا جسے مقامی لوگوں نے سراہا اور امید ظاہر کی کہ وہ آئندہ بھی خواتین کی آسانی کیلئے گھر کی دہلیز پر قومی شناختی کارڈ کے اجراء کیلئے اقدامات اٹھائیں گے۔ اس موقع پر زونل منیجر آئی آر سی رانیا تمکین نے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ خواتین کے قومی شناختی کارڈز بنانے سے جینڈر بیس کا خاتمہ ہو گا جس کا مقصد خواتین کو امپاور کرنا ہے کیونکہ قومی شناختی کارڈ کا ووٹ کے اندراج میں اہم کردار ہے اور یہی وجہ ہے کہ زیادہ تر خواتین کا کارڈ نہ بننے کی وجہ سے خواتین کے ووٹ کا ریشو کم ہے جبکہ شناختی کارڈز بنانے سے خواتین کے ووٹنگ میں اضافہ ہو گا۔ انہوں نے خواتین کو ہدایت کی کہ وہ شناختی کارڈز بنائیں تاکہ وہ حق رائے دہی استعمال کرنے سمیت احساس پروگرام کے تحت آنے والی رقم حاصل کر سکیں اور بینک اکاؤنٹ بھی کھول سکیں اسی طرح دیگر روز مرہ کی زندگی میں انہیں کسی قسم کی مشکلات درپیش نہیں آئیں گی۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -