صوابی،ڈکیت گروہ کا سرغنہ  گرفتار،3 لاکھ برآمد

صوابی،ڈکیت گروہ کا سرغنہ  گرفتار،3 لاکھ برآمد

  

صوابی(بیورورپورٹ)ٹوپی پولیس نے بین الصوبائی ڈکیت گروہ کاسرغنہ گرفتار کرکے ان کے قبضے سے لوٹی ہوئی 03 لاکھ روپے بھی برآمدکر لی۔ملزم نے ابتدائی تفتیش کے دوران ہی دیہہ سلیم خان،زیدہ،کلابٹ بائی پاس، تورڈھیر، جلسئی،موچی بانڈہ کے مقامات پر لاکھوں روپے لوٹنے کی وارداتوں کے حوالے سے انکشافات کئے ہیں۔ ڈی پی او آفس سے جاری پریس ریلیز کے مطابق پانچ اپریل کو ضیاء اللہ سکنہ زیدہ نے تھانہ ٹوپی میں ایف آئی آر درج کراتے ہوئے بتایا کہ ان کے پٹرول پمپ واقع نواز آباد کوٹھا کے سیل مین سے  نامعلوم ملزمان نے گن پوائنٹ پر 06 لاکھ 14 ہزار 970 روپے چھین کر فرار ہوئے۔واقع کی اطلاع ملتے ہی ڈی پی او صوابی محمد شعیب خان نے سخت ایکشن لیتے ہوئے مقامی پولیس کو جلد از جلد ملزمان ٹریس و گرفتار کرنے کا ٹاسک سونپااس سلسلے میں ایس پی انوسٹی گیشن بنارس خان کی سربراہی میں ڈی ایس پی سرکل ٹوپی افتخار علی کی قیادت میں تشکیل شدہ ٹیم ایس ایچ او ٹوپی انسپکٹر جواد خان،چوکی کلابٹ انچارج اے ایس آئی عامر خان،ہیڈکنسٹبل سیف اللہ خان نے دن رات ایک کرکے جدید سائنسی خطوط پر تفتیش کی بدولت ملزم خورشید سکنہ کلابٹ حال واہ کینٹ ٹیکسلا تک رسائی حاصل کرکے گرفتار کیا۔ملزم خورشید ایک بین الصوبائی ڈکیت گروہ سے تعلق رکھتا ہے جنہوں نے دورانِ تفتیش دیگر ساتھیوں کے نام بھی اگل دیے ہیں جنہیں فی الحال خفیہ رکھا جا رہا ہے،ملزم نے جرم کا اعتراف کرتے ہوئے دیگر اضلاع اور صوبوں میں بھی وارداتوں کا مرتکب ہونے کا انکشاف کیا ہے، ملزم کے قبضہ سے لوٹی ہوئی 3لاکھ روپے رقم برآمد کی گئی ہے اور مزید تفتیش جاری ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -